11 شہریوں کی ہلاکت، اقوامِ متحدہ حرکت میں آگیا

کابل:پاکستانی سرحد کے نزدیکی صوبے میں افغان سیکیورٹی فورسز کے آپریشن میں11 افغان شہری مارے گئے ۔حکومتی سیکیورٹی ادارے نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکیورٹی (این ڈی ایس) کا کہنا ہے کہ پکتیا میں طالبان کی خفیہ پناہ گاہ پر آپریشن کیا گیا جس کے نتیجے میں 11 عسکریت پسند مارے گئے جن میں 2 عسکری کمانڈر بھی تھے۔

افغانستان میں اقوامِ متحدہ کے معاون مشن کا کہنا ہے کہ اسے تلاشی کے عمل کے دوران ہونے والی ہلاکتوں پر سخت تشویش ہے اور انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والی ٹیمز اس کی تحقیقات کررہی ہیں۔اقوام متحدہ نے حکومت افغانستان سے اس سارے معاملے کی رپورٹ مانگ لی ہے.

ذرائع کے مطابق مقامی سیاستدان کا کہنا تھا کہ حکومتی فورسز نے عیدالاضحٰی کی تعطیلات کے دوران طالبعلموں کی ایک تقریب کو نشانہ بنایا۔پکتیا کی صوبائی کونسل کے رکن اللہ میر خان بہرمزوئی نے بتایا کہ ’یونیوسٹی کے ایک طالبعلم نے اپنے ہم جماعتوں کو عشایئے پر مدعو کر رکھا تھا، جب سیکیورٹی فورسز نے گھر کا گھیراؤ کیا اور انہیں باہر نکال کر ایک ایک کر کے قتل کردیا‘۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.