fbpx

اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیر کی خصوصی حیثیت تسلیم کرتے ہیں، او آئی سی کا دوٹوک اعلان

اوآئی سی نے بھارت کی جانب سےمقبوضہ کشمیرکی خصوصی حیثیت ختم کرنے پرتحفظات کا اظہار کیا ہے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق او آئی سی کی طرف سے کہا گیا ہے کہ مقبوضہ جموں وکشمیرکی آئینی حیثیت تبدیل کرنابھارت کا یکطرفہ اقدام ہے، یواین اوکی قراردادوں کےمطابق کشمیرکی خصوصی حیثیت تسلیم کرتے ہیں، مسئلہ کشمیرکاحل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق ہی ممکن ہے، تنازع جموں و کشمیر پاکستان اور بھارت کے درمیان مرکزی مسئلہ ہے، مقبوضہ جموں وکشمیر کی آئینی حیثیت کی تبدیلی بھارت کایکطرفہ اقدام ہے،

او آئی سی کا کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیرسے فوری طور پرکرفیو اُٹھایا جائے، سلامتی کونسل کی قراردادوں کیمطابق تنازع کشمیر کےپائیدار،منصفانہ حل ضروری ہے، او آئی سی نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت مذاکرات کا عمل شروع کریں، پاک بھارت مذاکرات جنوبی ایشیامیں ترقی، امن اور استحکام کیلیے ضروری ہے، تنازع کشمیر کاحل سلامتی کونسل کی قراردادوں کیمطابق اقوام متحدہ کی زیرنگرانی رائےشماری ہے،