امریکی حملے میں‌ مارے جانیوالے ایرانی جنرل نے دی تھی پاکستان کو بھی "دھمکی”

0
7

امریکی حملے میں‌ مارے جانیوالے ایرانی جنرل نے دی تھی پاکستان کو بھی "دھمکی”

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق امریکی حملے میں مارے جانے والے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کے حوالہ سے انکشاف ہوا ہے کہ انہوں نے پاکستان کو بھی دھمکی دی تھی،

خبر رساں ادارے نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ برس ایران میں ایک کار بم دھماکہ ہوا تھا ، یہ وہ وقت تھا جب پاکستان اور بھارت جنگ کے دہانے پر پہنچے ہوئے تھے ایسے میں ایران نے بھی پاکستان کو دھمکیاں دینا شروع کردی تھیں۔ 13 فروری 2019 کو بدھ کے روز ایران کے شہر اصفہان میں پاسدارانِ انقلاب کے فوجی کیمپ پر کار بم حملہ ہوا تھا جس میں 27 اہلکار ہلاک اور 12 زخمی ہوگئے تھے۔

22 فروری 2019 کو ایران کے شہر بابل میں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے میجر جنرل قاسم سلیمانی نے پاکستان کو دھمکیاں دیں۔

اپنے خطاب میں قاسم سلیمانی کا کہنا تھا کہ ایرانیوں کو پاکستان کی تعزیتوں کی ضرورت نہیں، یہ ایران میں لوگوں کی کیا مدد کرسکتی ہیں؟ ہم پاکستان سے دوستانہ لہجے میں بات کررہے ہیں اور ہم اس ملک سے یہ کہنا چاہتے ہیں کہ وہ اپنی سرحدوں کو ہمسایہ ممالک کی سلامتی کو ختم کرنے کا ذریعے نہ بننے دے، ہم اپنے دشمنوں سے انتقام لیں گے خواہ وہ دنیا کے کسی کونے میں بھی ہوں۔

انہوں نے کہا تھا کہ سعودی عرب پاکستان کو تباہ کرنا چاہتا ہے،سعودی عرب پاکستان اور اس کے ہمسایہ ممالک کے درمیان کشیدگی پیدا کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ پاکستانی حکومت سعودی عرب سے ملنے والی رقم کو انتہاپسندوں سے نمٹنے میں استعمال کرے اور ایران میں ہوئے بم دھماکے پر تعزیتی پیغام بھیجنے کے بجائے اپنی سرحدوں کے اندر موجود دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کرے.

قاسم سلیمانی کا کہنا تھا کہ ہم نے پاکستانی حکام سے کہا ہے کہ یا تو ان علاقوں کو پاک کیا جائے جہاں دہشت گرد گروپ موجود ہیں یا پھر ان سے نمٹنے کے لیے ایرانی فورسز کو ان علاقوں میں داخل ہونے کی اجازت دی جائے

القدس فورس کے سربراہ میجر جنرل قاسم سلیمانی کی جانب سے دھمکیوں کے بعد 24 فروری 2019 کو ایران نے پاکستانی سرحد کے قریب 10 لڑاکا طیارے تعینات کردیے تھے۔

ایران کی جانب سے ان دھمکیوں کے بعد 26 فروری کو انڈیا نے پاکستان پر ناکام سرجیکل سٹرائیک کی تھی جس میں 10 درخت گرائے گئے تھے ، بعد ازاں 27 فروری کو پاکستان نے جوابی کارروائی کرکے بھارت کے 2 طیارے مار گرائے اور ایک پائلٹ ابھینندن کو گرفتار کرلیا تھا جسے بعد ازاں وزیراعظم عمران خان نے جذبہ خیر سگالی کے تحت بھارت کے حوالے کر دیا

بغداد ایئر پورٹ پر امریکی فضائی حملے میں ایرانی جنرل سمیت 9 افراد ہلاک ہو گئے، فضائی حملے میں ہلاک جنرل قاسم سلیمانی القدس فورس کے سربراہ تھے، عراقی میڈیا کا کہنا ہے کہ دیگر ہلاک شدگان میں ایران نواز ملیشیا الحشد الشعبی کا رہنما بھی شامل ہے۔

بغداد میں امریکی حملے پر ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ جنرل سلیمانی پر حملہ عالمی دہشت گردی ہے، امریکا کو اس حرکت کے نتائج بھگتنا ہوں گے۔ ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے اس حملے کو عالمی دہشت گردی قرار دیا ہے۔

امریکی حملے میں ایران کے قاسم سلیمانی،عراقی ملیشیا کے کمانڈر جاں بحق، ایران نے دیا امریکہ کو سخت ردعمل

قاسم سلیمانی کو ٹرمپ کی ہدایت پر مارا گیا، پینٹا گون، ٹرمپ نے کیا کہا؟

ایرانی جنرل کو مارنے کے بعد امریکہ نے دی شہریوں کو اہم ہدایات

جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت، امریکہ نے خطے کا امن داؤ پر لگا دیا، ایسا کس نے کہا؟

ایرانی جنرل پر امریکی حملہ، چین بھی میدان میں آ گیا، بڑا مطالبہ کر دیا

تیسری عالمی جنگ، امریکا کے خطرناک ترین عزائم، سابق امریکی وزیر خارجہ کے انٹرویو نے تہلکہ مچا دیا

مریکا کے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی پر حملے میں ہلاکت کے بعد مشرق وسطیٰ کے حالات کشیدہ ہیں، ایران نے انتقام لینے کی دھمکی دی ہے، امریکی صدر ٹرمپ بھی دھمکی آمیز بیانات دے رہے ہیں، امریکی وزیر خارجہ نے پاکستان اور سعودی عرب سے رابطہ کیا ہے، چین ،پاکستان نے دونوں ممالک کو پرامن رہنے کی اپیل کی ہے اور بات چیت سے معاملہ حل کرنے کا کہا ہے،اسرائیل بھی ہائی الرٹ ہے، امریکا نے چوبیس گھنٹے میں بغداد پر دوسرا حملہ بھی کیا ہے.،

Leave a reply