ایرانی تیل بردار جہاز چھوڑنے پر امریکا کو کئی خدشات

امریکہ نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ایرانی تیل بردار جہاز (گریس 1) کو چھوٹ دینے سے دہشت گردوں کو امداد پہنچ سکتی ہے جو شام میں برسر پیکار ہیں اور ایرانی جہاز کو اجازت دینا افسوس ناک ہے.

امریکی وزارت خارجہ کے ایک ذمے دار نے پیر کے روز بتایا کہ ہم نے یونان کو آگاہ کر دیا کہ ایرانی تیل بردار جہاز غیر قانونی طور پر تیل کو شام منتقل کر رہا ہے .. ہم نے ایرانی تیل بردار جہاز کے حوالے سے اپنا مضبوط مخالف موقف یونانی حکومت کو پہنچا دیا۔

دوسری جانب امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ طویل ہفتوں تک تحویل میں رکھنے کے بعد ایرانی تیل بردار جہاز کو کوچ کی اجازت دینا افسوس ناک ہے۔

فوکس نیوز کو دیے گئے ایک انٹرویو میں انہوں نے مزید کہا ک برطانیہ کے زیر انتظام ریجن کی حکومت کا فیصلہ “انتہائی افسوس ناک ہے”۔ پومپیو کے مطابق اس تیل بردار جہاز پر لدی کھیپ کی فروخت سے تہران کو ایرانی مسلح افواج کی فنڈنگ کا موقع ملے گا جنہوں نے دنیا بھر میں دہشت اور تباہی پھیلانے کے ساتھ ساتھ امریکیوں کو قتل کیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.