اسامہ ستی کے قتل کے خلاف عملی اقدام سامنے آگیا

اسامہ ستی کے قتل کے خلاف عملی اقدام سامنے آگیا

باغی ٹی وی : طالبعلم اسامہ ستی قتل میں وفاقی پولیس کا عملی اقدام، قتل میں ملوث 5 اہلکاروں کو پولیس سروس سے برطرف کر دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق پولیس اہلکاروں کو مس کنڈکٹ اور قصوروار ثابت ہونے پر برطرف کیا گیا، اہلکاروں کی بر طرفی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔ برطرف ہونے والوں میں سب انسپکٹر افتخار، کانسٹبل مصطفی، شکیل، مدثر اور سعید شامل ہیں.

اسلام آباد میں پولیس اہلکاروں کی فائرنگ سے نوجوان کے قتل کا معاملہ اور رخ اختیار کرگیا

اسامہ ندیم ستی کو انصاف دیا جائے ،پاکستانی عوام کا مطالبہ، ٹوئٹر پر ٹاپ ٹرینڈ

پ

واضح رہے کہ پولیس نے طالبعلم کی گاڑی پر 22 گولیاں برسا دیں،طالب علم جاں بحق،5 اہلکار گرفتار

رات طالبعلم اسامہ ندیم ستی کو اسلام آباد پولیس کے کاونٹر ٹیرارزم ڈیپارٹمنٹ کے اہلکاروں نے 22 گولیاں مار کر شہید کر دیا تھا- جاں بحق نوجوان کے والد نے تھانہ رمنا پولیس کو درخواست جمع کرائی تھی درخواست گزار نے کہا کہ بیٹا رات 2 بجے دوست کو یونیورسٹی چھوڑنے گیا،بیٹے سے پولیس اہلکاروں کا جھگڑا ہوا تھا،انہوں نے دھمکی دی کہ مزہ چکھائیں گے،میرے بیٹے نے پولیس اہلکاروں کا مجھ سے ذکر کیا تھا،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.