fbpx

عثمان مختار کو ہراساں اور بلیک میل کرنے والی خاتون منظر عام پر آگئی

پاکستانی اداکار عثمان مختار کو ہراساں اور بلیک میل کرنے والی مبینہ خاتون نے منظرِ عام پر آگئیں خاتون نے اداکار پر الزامات کی بوچھاڑ کر دی۔

باغی ٹی وی : حال ہی میں عثمان مختار نے انسٹاگرام پوسٹ پر مداحوں کو بتایا تھا کہ کیسے ایک خاتون انہیں ڈیڑھ سال سے ہراساں اور بلیک میل کر رہی ہے تاہم اب اداکار کے الزامات کے بعد خاتون بھی منظر عام پر آ گئیں ہیں –

مہروز وسیم نامی خاتون ڈائریکٹر کی جانب سے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ سے ایف آئی اے کے لیے لکھے گئے بیان کو شیئر کیا گیاخاتون کے ایف آئی اے کے نام لکھے گئے وضاحتی بیان پر عثمان مختار کا نام درج ہے جب کہ خاتون نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے 2016 میں عثمان مختار کو ‘آزاد’ نامی گانا بنانے کے لیے بطور ڈائریکٹر کاسٹ کیا تھا۔

مہروز وسیم کے مطابق عثمان مختار اس کی بہت زیادہ رقم وصول کر رہے تھے لیکن بات چیت کے بعد اداکار نے رقم میں کمی کا فیصلہ کر لیا تھا جس کے بعد دونوں فریقین اس پر راضی ہو گئے تھے۔

خاتون ڈائریکٹر کا مزید کہنا تھا کہ اداکار عثمان مختار گھریلو حالات کے باعث پریشانیوں کا شکار تھے اور وہ کام کرنے کے بجائے انہیں گرل فرینڈ کی باتیں اور اپنی نجی زندگی کے معاملات بتانا شروع کر دیے، وہ بتاتے تھے کہ انہیں کس قسم کی خواتین پسند ہیں بعدازاں اداکار کی جانب سے وقت پر کام مکمل نا ہونے کی صورت میں انہوں نے اپنا گانا ازخود بنا لیا۔

مہروز نے اپنی طویل پوسٹ میں کہا کہ عثمان مختار کام کرنے کی اخلاقیات سے ناآشنا ہیں، انہیں کام کے لیے فون کرتی رہی لیکن انہوں نے جواب نا دیا، بعدازاں مجھ پر بے تکے الزام لگاتے ہوئے ایف آئی اے میں درخواست دائر کر دی۔

دوسری جانب خاتون مہروز وسیم کے ان الزامات پرعثمان مختار نے تاحال کوئی ردعمل ظاہر نہیں کیا ہے-