fbpx

وائس چئیرمین اورچیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی بار کونسل کی حامد میرپر پابندی کی سخت الفاظ میں مذمت

پاکستان بار کونسل کے وائس چیئرمین مسٹر خورشید دل خان اور مسٹر محمد فہیم ولی چیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی نے سینئیر جرنلسٹ حامد میر پر پابندی کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے-

باغی ٹی وی : وائس چیئرمین مسٹر خورشید دل خان اور مسٹر محمد فہیم ولی چیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی نے سینئیر جرنلسٹ حامد میر کو ٹاک شو سے ہٹائے جانے اور ان پر پابندیاں عائد کرنے اور شہریوں کے اظہار رائے اور ڈیجیٹل حقوق کو پامال کرنے کی کوششوں کی شدید مذمت کی ہے –

انہوں نے اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا اور حکومت کے غیر جمہوری اقدام اور کسی سینئر صحافی کو اس کے ٹاک شو پر پابندی عائد کرنے کے اقدامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ آزادی اظہار اور اظہار رائے کے حقوق آرٹیکل 19 کے تحت حقوق اور آئین میں شامل ہیں-

انہوں نے حکومت سے مسٹر حامد میر پر اس طرح کی پابندی کو واپس لینے کے لئے فوری اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے قانون کی حکمرانی کو برقرار رکھنے کی سمت کام کرنے والوں کو دھمکانے اور دھمکی دینے کی مذمت کی-

انہوں نے کہا کہ قانونی برادری ہمیشہ آزادی کے ساتھ کھڑی رہے گی میڈیا ہر طرح کی مرئی اور پوشیدہ جارحیت کے خلاف ہے اور ان کی آزاد آواز کو روکنے کے لئے کسی بھی طرح کی دھمکی برداشت نہیں کرے گا-

واضح رہے کہ حامد میر کے خلاف غداری کے مقدمہ کے انداج کیلئے سینئر صحافی عامر سلیم راٹھور کی مدعیت میں تھانہ تیموریہ کراچی میں درخواست دی گئی، میڈیا فیڈریشن آف پاکستان کے مرکزی صدر یاسین علی شیخ بھی ہمراہ تھے-

خیال رہے کہ اسد طور پر حملے کے بعد اسلام آباد کے صحافیوں نے احتجاج کیا تھا جس کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے حامد میر کی گرفتاری کا بھی مطالبہ کیا تھا ،حامد میر نے اداروں پر تنقید کی تھی، حامد میر کی گرفتاری کے لئے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر تین دن ٹرینڈ مسلسل ٹاپ پر رہا-

نواز شریف کا علاج اس سے کروایا جائے جس نے اسد طور کو دو دن میں ٹھیک کر دیا،صارفین

جیو کے معروف اینکر کا آخر لمبا رشتہ ختم ہونے ہی والا ہے، مبشر لقمان

حامد میر پر بڑی پابندی لگا دی گئی

جیو سے نکالے جانے کے بعد حامد میر نے بھی بڑا اعلان کر دیا

حامد میرکو نکالے جانے پر ن لیگی رہنما نے بھی بڑا اعلان کر دیا

حامد میر کے خلاف انداج مقدمہ کیلئے ایک اور درخواست،سزائے موت دی جائے، مطالبہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.