ولادی میر پوتن بھی عمران خان بن گئے:کہتےہیں کہ گھبرانا نہیں‌:منصوبے کے مطابق آگے بڑھ رہے ہیں‌

0
58

کریملن کے تمام مقاصد پورے ہوں گے، پیوٹن کا دعویٰ

صدر ولادیمیر پیوٹن نے ماسکو کے اسٹیڈم میں روسی پرچم لہراتے لاکھوں لوگوں سے خطاب میں کہا کہ کریملن کے مقاصد پورے ہوں گے۔

روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے لوگوں سے کھچا کھچ بھرے ہوئے ایک فٹ بال اسٹیڈیم میں خطاب کیا اور یوکرین پر حملے کو درست قرار دیا۔

انہوں نے روسی پرچم لہراتے لاکھوں افراد سے کہا کہ کریملن کے تمام مقاصد پورے ہوں گے۔وزیراعظم عمران خان کے معروف جملوں کو دہراتے ہوئے کہا کہ گھبرانا نہیں‌ ہم ایک خاص منصوبے کے تحت آگے بڑھ رہے ہیں‌

لوزنکی اسٹیڈیم میں ریلی سے خطاب کرتے ہوئے پیوٹن نے کہا کہ ہمیں پتہ ہے کہ ہمیں کیا کرنا ہے، کیسے کرنا ہے، اوراس کی کیا قیمت ہو گی۔اور ہم اپنے تمام مقاصد کامیابی کے ساتھ حاصل کر لیں گے۔

انھوں نے یوکرین کی لڑائی کو خصوصی فوجی آپریشن قرار دیا اور کہا کہ سپاہی جذبے سے لڑ رہے ہیں جو بات روس کے اتحاد کی مظہر ہے۔

بقول پیوٹن کے کاندھا کاندھے سے ملا کر، وہ ایک دوسرے کی مدد کرتے ہیں، ایک دوسرے کی حمایت کرتے ہیں، اور ضرورت پڑنے پر بھائیوں کی طرح ایک دوسرے کی جان بچانے کے لیے اپنی جان قربان کرتے ہیں۔

پیوٹن نے کہا کہ ایک طویل عرصے سے اس قسم کے اتحاد کا مظاہرہ نہیں دیکھا۔

پیوٹن کے خطاب کے دوران سرکاری ٹیلی ویژن نے تھوڑی دیر تک ان کا خطاب منقطع کرکے قومی ترانوں پر مشتمل ریکارڈ شدہ فوٹیج دکھائی۔ لیکن، بعدازاں کریملن کے سربراہ پھر اسکرین پر دکھائی دیے۔

روسی خبر رساں ادارے نے کریملن کے ترجمان، دمتری پیسکوف کے حوالے سے کہا ہے کہ سرورمیں تکنیکی خرابی کے باعث ٹیلی ویژن سے پیوٹن کی تقریر کی نشریات منقطع ہوئیں۔

ولادیمیر پیوٹن نے کہا کہ یوکرین کا آپریشن ضروری تھا چونکہ یوکرین کو استعمال کرتے ہوئے، بقول ان کے، امریکہ روس کو دھمکیاں دے رہا تھا، جب کہ روس روسی زبان بولنے والے افراد کو یوکرین کے قتل عام سے بچانا چاہتا تھا۔

 

یوکرین کا کہنا ہے کہ وہ اپنی بقا کی جنگ لڑ رہا ہے اور یہ کہ پیوٹن کا قتل عام کا دعویٰ بے بنیاد ہے۔ مغربی ملکوں کا کہنا ہے کہ یہ دعویٰ کرنا کہ وہ روس کا شیرازہ بکھیرنا چاہتے ہیں، درست نہیں۔

جس اسٹیج پر پیوٹن خطاب کررہے تھے وہاں بینروں پر نعرے تحریر تھے، جیسا کہ دنیا کو نازی ازم کی ضرورت نہیں اورہمارے صدر کے لیے کا نعرہ ، جس کے لیے یوکرین میں جاری فوجی کارروائی کے دوران انگریزی حرف زیڈ کی شکل کا نشان استعمال ہو رہا ہے۔

میڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق لوزنکی اسٹیڈیم میں منعقدہ اس تقریب میں دو لاکھ سے زائد لوگ موجود تھے۔

پیوٹن نے ملکی افواج کو سراہا، جوشیلنگ اور میزائل حملوں کے ذریعے یوکرین کے خلاف لڑ رہے ہیں۔اس موقع پر معروف روسی گلوکار اولیگ گزمانوف نے میڈ ان رشیا کے عنوان پر ایک گانابھی گایا۔

Leave a reply