وفاق کی گرین لائن بس چلانے کے لئے سندھ حکومت سے تعاون کی یقین دہائی

وفاق نے سندھ ہائی کورٹ میں اپنی رپورٹ میں یقین دلایا ہے کہ کراچی میں گرین بس چلانے کیلئے سندھ حکومت سےتعاون کیاجائےگا۔بدھ کوسندھ ہائی کورٹ میں کراچی میں ٹرانسپورٹ کی سہولت سے متعلق کیس کی سماعت میں وفاقی حکومت نے گرین لائن بس سروس سے متعلق رپورٹ جمع کروادی۔وفاق نے عدالت کو بتایا کہ گرین لائن بس سروس کا 24کلومیٹرٹریک کا فیزون مکمل ہوچکا ہے۔دوسرافیزمارچ2021تک مکمل ہوجائےگا۔اس پروجیکٹ میں سرجانی ٹاؤن سے ٹاور تک 24 اسٹیشنز ہونگے۔ دوسرے فیز میں نمائش کےبعد والے ٹریک میں سول ورک جاری ہے۔
رپورٹ میں بتایا گیا کہ 80 بسیں جلد کراچی پہنچ جائیں گی اورنجی ادارے سے تمام ٹینڈرز ہوچکے ہیں۔اس حوالےسے ادائیگیوں کا طریقہ کار جاری ہے۔ گرین لائن اوراورنج لائن بسوں کیلئے چینی کمپنی سےمعاہدہ کیا گیا ہے۔وفاقی حکومت نے کہا ہے کہ ابتدائی طور پر 3 برس کے لیے یہ منصوبہ سندھ حکومت کے حوالے کیا جائے گا اور سندھ حکومت ہی اس کو چلائے گی۔سپریم کورٹ کو بھی وفاقی حکومت نے یہ بتایا تھا کہ رواں برس گرین لائن بس سروس منصوبہ مکمل فعال کردیا جائے گا۔ درخواست گزار کو جوابی دلائی کےلیے تیاری کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ کیس کی سماعت یکم اپریل تک ملتوی کردی گئی ہے۔
گرين لائن بس جون2021 تک چلانے کا حکم
گرين لائن بس جون2021 تک چلانے کا حکم
گرین لائن بس منصوبہ 2021 میں مکمل ہوجائے گا.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.