fbpx

امتحانات منسوخ نہ کرنے پرردعمل: وقار ذکا طلبہ کی آخری امید بن گئے

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے منگل کو اعلان کیا تھا کہ کورونا وائرس کی تیسری لہر سے متاثرہ اضلاع میں پہلی سے 8ویں جماعت تک تدریسی عمل 28 اپریل تک نہیں ہوگا تاہم نویں سے بارہویں جماعت تک کے امتحانات مئی کے تیسرے ہفتے میں ہوں گے۔

باغی ٹی وی :نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے، شفقت محمود نے کہا تھا کہ نویں سے بارہویں جماعت تک کے امتحانات مئی کے تیسرے ہفتے میں ہوں گے۔

انہوں نے کہا تھا کہ امتحانات کی تاریخ اس لیے بڑھائی گئی ہے تاکہ کورونا کے حالات اس وقت تک کچھ بہتر ہوجائیں تاہم امتحانات کو منسوخ نہیں کیا جائے گا۔

بعدازاں شفقت محمود نے امتحانات منسوخ نہ کرنے کے اس فیصلے سے متعلق سوشل میڈیا پر بھی آگاہ کیا تھا۔


شفقت محمود نے اپنے آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ پر کی گئی ٹوئٹ میں کہا تھا کہ امتحانات سے متعلق فیصلہ حتمی ہے، طلبہ کو چاہیے کہ امتحانات کی تیاری شروع کریں اور سخت محنت کریں۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ اس فیصلے کو تبدیل نہیں کیا جائے گا لہٰذا کسی کے ذہن میں اس بارے میں کوئی شک نہیں ہونا چاہیے، سب کچھ تعلیم کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئےکیا گیا ہے۔

میزبان وقار ذکاء نے ٹوئٹر پر وزیرتعلیم شفقت محمود کے امتحانات سے متعلق کیے گئے ٹوئٹ کو ری ٹوئٹ کیا اور لکھا کہ ’آپ کو افسوس ہوگا-


وقار زکا کے وزیر تعلم کے اس فیصلے سے اختلافی ٹئوٹ کے بعد، سوشل میڈیا پر طلبہ کی طرف سے دلچسپ میمز شئیر کیں جہاں تک کہ وقار ذکا طلباء کی آخری امید اور حقیقی ہیرو بن گئے-


حذیفہ نامی صارف نے وزیر تعلیم کے فیصلے پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ ‘وقار ذکا ہی چھوڑنا پڑے گا تم لوگوں کے اوپر اب’۔


جبکہ جانب کچھ طلبہ کو وقار ذکا کی جانب سے پریس کانفرنس کا بھی انتظار ہے۔

یہ پہلی مرتبہ نہیں ہے کہ وقار ذکا نے اپنے نوجوان مداحوں کے لیے آواز اٹھائی ہو، وقار ذکا نے اس سے قبل وزارت تعلیم کی جانب سے طلبہ کے امتحانات سے متعلق وزیراعظم عمران خان سے سوال کیا تھا۔

انہوں نے ٹوئٹ میں کہا تھا کہ جب یہ ممالک کیمبرج امتحانات کی اجازت نہیں دے رہے تو شفقت محمود ایسا کیوں نہیں کررہے، آپ کیوں چاہتے ہیں کہ طلبہ احتجج کریں؟

عاصم اظہر امتحانات سے متعلق پریشان طلبا کی مدد کے لیے میدان میں کود پڑے

براہ کرم بچوں کے بارے میں سوچیں حدیقہ کیانی کی وزیر تعلیم شفقت محمود سے درخواست

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.