fbpx

وزیراعظم کو ہم سے کیے گئے وعدے یاد کرائیں، ایم کیو ایم کا گورنر سندھ سے شکوہ

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے 3 رکنی وفد نے گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملاقات کی۔ گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملاقات میں سینیئر ڈپٹی کنوینر عامر خان، کنور نوید جمیل اور وسیم اختر شامل تھے۔  متحدہ کے وفد نے ملاقات میں کہا کہ ایم کیو ایم سے کیے گئے تحریری معاہدے پر کوئی پیش رفت نہیں ہوئی۔ ذرائع کے مطابق معاہدے میں سندھ کے شہری علاقوں میں ترقی، دوبارہ مردم شماری کروانے سمیت ایم کیو ایم کے دفاتر کھلنا، لاپتہ کارکنان کی بازیابی اور جھوٹے مقدمات کا خاتمہ بھی شامل ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیوایم نے ملاقات میں شکوہ کیا کہ کارکنان پر جھوٹے مقدمات بنائے گئے، کارکنان ابھی تک لاپتہ ہیں، ایم کیو ایم کے دفاتر ابھی تک بند ہیں جبکہ اس حوالے سے کوئی اقدامات ہوتے نظر نہیں آرہے اور دوسری طرف لیاری گینگ وار کا سرغنہ عزیر بلوچ ہر تیسرے روز مختلف مقدمات میں بری ہورہا ہے۔
ملاقات میں بتایا گیا کہ کراچی میں ترقیاتی کام التواء کا شکار ہیں، ان میں تیزی لائی جائے اور وزیراعظم عمران خان کو ایم کیو ایم سے کیے گئے وعدے یاد کرائیں۔ گورنر سندھ نے متحدہ وفد کو بتایا کہ کراچی کے ترقیاتی منصوبوں کو یقینی طور پر مکمل کیا جائے گا، وزیر اعظم کراچی کی ترقی میں ذاتی دلچسپی رکھتے ہیں۔ ملاقات میں گورنر سندھ کی جانب سے یقین دہانی کرائی گئی کہ حکومت کی جانب سے اعلان کیے جانے والے تمام امور کو جلد مکمل کیا جائے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.