fbpx

ملتان:یتیم لڑکی کی جائیداد پر سوتیلے بھائی اور چچا کا قبضہ، قتل کی دھمکیاں، لڑکی کی اعلی حکام سے انصاف کی اپیل

ملتان کے شہر کی رہائشی یتیم لڑکی عالیہ شعیب کی وراثتی جائیداد پر سوتیلے بھائی اور چچا نے قبضہ کر لیا متاثرہ لڑکی نے وزیراعظم اور وزیراعلیٰ پنجاب سے انصاف کی اپیل کی ہے-

باغی ٹی وی : سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں ملتان کے قریبی شہر کی رہائشی عالیہ شعیب کہنا ہے کہ ان کے والد کا دو سال ہوئے انتقال ہو چکا ہے دو سال گزرنے کے باوجود وارثت میں ان کوحصہ نہیں ملا ان کے چچا اور سوتیلے بھائی نے وراثتی جائیداد پر رقبضہ جما رکھا ہے-


میڈیکل فرسٹ ائیر کی طالبعلم عالیہ شعیب نےسوال کیا کہ کیا اس ملک میں انصاف ملنا اتنا مشکل ہے کیا اس ملک میں اگر آپ یتم ہوتے ہو تو اتنا دربدر کر دیا جاتا ہے کیا آپ کو دھمکیاں ملتی ہیں کہ آپ کو اپنا حق مانگنے پر قتل تک کرنے کی دھمکی دی جاتی ہے؟-

عالیہ شعیب نے وزیر اعظم پاکستان، وزیراعلیٰ پنجاب ، چیف آف آرمی سٹاف اور چیف جسٹس آف پاکستان سے سوال کیا کہ کیوں ہمارے ادراوں میں سیاسی اثرو رسوخ اور پریشر بڑھ رہاہے کیوں ہمیں انصاف نہیں ملتا؟-

عالیہ نے کہا کہ میرے والد کی وفات کو دوسال سےزیادہ عرصہ گزر گیا ہے میرے والد صاحب کہا کرتے تھے کوئی اپنا نہیں ہے لوگ صرف مطلب کے ہوتے ہیں اگر کوئی آپ کے ساتھ حد سے زیادہ اچھا اور میٹھا ہے اس سے زیادہ آپ کے لئے بُرا کوئی نہیں ہے اور ان کی وفات کے بعد مجھے یہ بات بہت اچھے سے سمجھ آئی اور انہی کے اپنوں نےمجھے یہ بات بات سمجھائی-

ملتان کی رہائشی متاثرہ لڑکی نے مزید کہا کہ میرا ایک سوال ہے کیا اس ملک میں انصاف ملنا اتنا مشکل ہے کہ ہر کسی کے ساتھ ہی یہی ہو رہا ہے کیا یتیم بچے ہر وقت عدالتوں اور حکومتی اداروں کے چکر لگاتے پھریں کیا بیوہ عورتوں کے ساتھ بد سلوکی ہو رہی ہے کیا ان پر سیاسی پریشر بڑھ رہا ہے یا صرف ہمارے ساتھ ہی ہو رہا ہے ؟-

انہوں نے بتایا کہ شروع میں سوتیلا بھائی اور چچا اچھے بن کر ریوینیو ڈیپارٹمنٹ کے ساتھ مل کر جھوٹے کیس بناتے رہے وراثت کا انتقال جو کہ قانوناً ایک ماہ کے اندر اندر درج کیا جاتا ہے ہمیں کروانے میں ایک سال لگ گیا حلقہ پٹواری جو ہمارے چچا اور بھائی سے رشوت لئے بیٹھے ہیں ہمیں ہماری زمینوں کے دستاویزات نہیں دیتے-


ملتان کے ایم این اے احمد حسین ڈہہڑ کے سیاسی دباؤ وجہ سے کوئی ایکشن نہیں لیتا کمشنر ، ڈی سی تمام آفس کے بعد اب مجھے انصاف کی امید نہیں
میری اعلیٰ حکام سے گذارش ہے کہ ہمیں انصاف دلایا جائے-