ڈاکٹرز کس پر برہم خبر آ گئ

8سرگودھا(نمائندہ باغی ٹی وی) پنجاب میں سرکاری ہسپتالوں کی مجوزہ نجکاری کے خلاف گرینڈ ہیلتھ الائنس کی جانب سے سرگودھا میں دسویں روز بھی ڈاکٹر ز، نرسز، پیرا میڈیکل سٹاف نے ڈی ایچ کیو ہسپتال سرگودھا میں آﺅٹ ڈور بند کر کے ہڑتال کی اور احتجاجی مظاہرہ کیا، ایم ایس آفس کے باہر دھرنا دیا۔ جس سے ہسپتال میں علاج معالجہ کا عمل ٹھپ ہو کر رہ گیا، او پی ڈی مکمل بند ہونے کے باعث دور دراز سے آنے والے ہزاروں مریضوں کو مایوس واپس لوٹنا پڑا۔پنجاب بھر کی طرح سرگودھا میں بھی ہسپتالوں کی مجوزہ نجکاری کے خلاف اور چارٹر آف ڈیمانڈ کے حق میں ہفتہ کے روز بھی مکمل ہڑتال کی گئی اور ڈاکٹر ز و نرسوں نے مکمل طور پر بائیکاٹ کیا اور اور پیرامیڈیکل ہیلتھ الاﺅنس نے بھی اظہاریکجہتی کےلئے کام بند کئے رکھا،جس سے علاج معالجہ کا عمل درہم برہم اورآﺅٹ ڈور اور وارڈز کے مریض رل کر رہ گئے تاہم ایمرجنسی میں طبی امداد کا عمل جاری رہا، گرینڈ ہیلتھ الائنس کے زیر اہتمام احتجاجی مظاہرہ بھی کیا گیا۔ اور ہسپتالوں کی نجکاری کا فیصلہ فوری واپس لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے، ا س موقع پر وائی ڈی اے پنجاب کے صدر ڈاکٹر قاسم اعوان، سینئر نائب صدر حامد جگ، سینئر نائب صدر ڈاکٹر عثمان امتیاز، چیئر مین سرگودھا ڈاکٹر وقاص لطیف بیگ، جنرل سیکرٹری اسامہ بن سعید اور پیرا میڈیکل کے صدر مجتبیٰ نے اظہار خیال کرتے ہوئے بتایا کہ چارٹر آف ڈیمانڈ کے حق میں گرینڈ الائنس قائم کیا گیا ہے، حکومت ہسپتالوں کی نجکاری کرنا چاہتی ہے جبکہ ہسپتالوں کی نجکاری کا کے پی کے میں کیا جانے والا تجربہ ناکام ہو چکا ہے۔ کسی بھی صورت پنجاب میں ہسپتالوں کی نجکاری نہیں ہونے دیں گے اور جب تک حکومت یہ فیصلہ واپس نہیں لیتی اس وقت تک احتجاج جاری رکھیں گے، اور آئندہ ہفتے پنجاب بھر کے ڈاکٹر لاہور میں وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ اور وزیر اعلیٰ ہاﺅس کے باہر دھرنا دیں گے۔ اگر حکومت نے کسی قسم کی تادیبی یا انتقامی کاروائی جس کا ہمیں کہا جا رہا ہے کی کوشش کی تو بھرپور مزاحمت کے ساتھ ساتھ پنجاب بھر کے ہسپتالوں کا نظام مکمل بند کر دیں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.