fbpx

یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ شیخ راشد شفیق کا ذاتی موبائل سعودی عرب میں رہ گیا ہو،عدالت برہم

یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ شیخ راشد شفیق کا ذاتی موبائل سعودی عرب میں رہ گیا ہو،عدالت برہم

رکن قومی اسمبلی شیخ راشد شفیق کو تیسری مرتبہ عدالت پیش کردیا گیا

مال مقدمہ عدالت میں کیوں نہیں پیش کیا گیا،فاضل ڈیوٹی جج پولیس پربرہم ہو گئے،پولیس نے عدالت میں موقف اپناتے ہوئے کہا کہ موبائل فون سعودی عرب میں رہ گیا ہے، عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ شیخ راشد شفیق کا ذاتی موبائل سعودی عرب میں رہ گیا ہو،30 منٹ میں موبائل لوکیٹ کرکے جواب دیا جائے فاضل ڈیوٹی جج نے پولیس کوموبائل فون کی ای ایم آئی نمبر رپورٹ پیش کرنے حکم دے دیا،مدعی مقدمہ قاضی طارق پولیس تفتیش سے غیر مطمئن نظر آئے اور عدالت میں کہا کہ ملزم کو بغیر ہتھکڑی کے عدالت پیش کیا جارہا ہے

عدالت نے پولیس کی جانب سے ملزم شیخ راشد شفیق کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کر دی،رکن قومی اسمبلی شیخ راشد شفیق کو جیل بھجوا دیا گیا ڈیوٹی مجسٹریٹ محمد ذیشان نے تاریخ ضمانت کیلئے 6مئی کا نوٹس جاری کردیا پولیس کی 6 گاڑیوں میں شیخ راشد شفیق کو ڈسٹرکٹ اٹک منتقل کردیا گیا.عدالت نے ملزم کو 14 روزہ جوڈیشیل ریمانڈ‌پر جیل بھجوایا ہے

دوسری جانب راولپنڈی سے آئے کارکنوں نے کچہری چوک پر راشد شفیق کے حق میں احتجاج کیا کچہری چوک میں پولیس نے راستہ دواطراف سے بلاک کر دیا ، تحریک انصاف کے رہنما و کارکنان بھی یکجہتی کے لئے عدالت کے باہرموجود تھے،پی ٹی آئی کارکنان نے کچہری گیٹ پر حکومت کے خلاف نعرہ بازی کی . عدالت کے باہر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں اور پولیس کی اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔

شیخ راشد شفیق عمرے کی ادائیگی کے بعد نجی ایئر لائن کی پرواز سے اسلام آباد پہنچے تھے کہ انہیں اسلام آباد ایئر پورٹ سے گرفتار کیا گیا تھا۔ سابق وزیر داخلہ شیخ رشید کے بھتیجے شیخ راشد شفیق کا ایک روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کیا گیا تھا۔ راشد شفیق کے خلاف فیصل آباد میں مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ اسی مقدمے میں سابق وزیراعظم عمران خان، سابق وزیر اطلاعات فواد چوہدری، شہباز گِل، انیل مسرت، نبیل مسرت، جہانگیر چیکو، سمیت دیگر کو نامزد کیا گیا ہے، ایک مقدمہ اٹک میں بھی درج کیا گیا ہے

مسجد نبوی میں وزیراعظم شہباز شریف اور پاکستانی وفد کے ساتھ ہونے والے نازیبا سلوک کے بارے میں اہم انکشافات سامنے آیا ہے سابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کے بھتیجے شیخ راشد شفیق اس وقت سعودی عرب میں تھے نازیبا واقعہ ہوا تو اسکے بعد شیخ راشد شفیق نے اپنا ایک ویڈیو پیغام شیئر کیا ہے جس کے بعد سوال اٹھایا جا رہا ہے کہ شیخ راشد ہی اس واقعے میں ملوث ہیں اور شیخ رشید کے کہنے پر انہوں نے ایسا کیا ہے، کیونکہ گزشتہ روز شیخ رشید نے میڈیا ٹاک میں کہا تھا کہ کہ یہ لوگ حرم جائیں، دیکھئے انکے ساتھ کیا سلوک ہوتا ہے، شیخ رشید بھی کراچی جلسہ کے بعد عمرہ کر کے آئے ہیں،مبینہ اطلاعات کے مطابق باقاعدہ منصوبہ بندی کے ساتھ لوگوں کو پیسے دے کر یہ کام کروایا گیا اور اس مین عمران خان کے ایک قریبی دوست بھی شامل ہیں

مسجد نبوی میں نازیبا نعرے، مولانا طارق جمیل بھی خاموش نہ رہ سکے

مسجد نبوی واقعہ توہین رسالت کے زمرے میں‌ آتا ہے، مبشر لقمان کے فین کی قوم سے اپیل

مسجد نبوی کو جلسہ گاہ بنانیوالو شرم کرو، بے حرمتی کا سازشی پکڑا گیا، مبشر لقمان پھٹ پڑے

مسجد نبوی میں نازیبا نعرے، رانا ثناء اللہ نے بڑا اعلان کر دیا

سینکڑوں پیغامات موصول ہوئے کہ حکومت ایکشن کیوں نہیں لے رہی۔ مریم نواز کا ردعمل

سعودی عرب میں گرفتاریوں کی ویڈیو

شیخ رشید کے بھتیجے شیخ راشد شفیق مسجد نبوی میں واقعہ کی خود نگرانی کرتے رہے

شیخ راشد شفیق کی عدالت پیشی،عید گزاریں گے جیل میں