معاشرے میں‌ امیر، غریب کا الگ قانون بنانے والے جیل میں‌ بھی تفریق چاہتے ہیں، فردوس عاشق اعوان

وزیر اعظم پاکستان کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ جیل میں کوئی جاتا ہےتو کوئی نہ کوئی سزاپوری کرنے ہی جاتا ہے، 25جولائی کواداروں کو بااختیار اور آزاد بنانے کے عمل کا آغاز ہوا، 10سال ملک کی معیشت کوکیسےزہرآلودکیا،کل پریس کانفرنس میں آگاہ کرونگی،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق جیل میں بھی وہ کہتے ہیں قیدیوں میں تفریق کردیں ، اے کلاس بی کلاس نام دیے گئے یہ بھی طبقاتی تفریق ہے ، یہ جیل میں جاکر بھی تفریق پھیلانا چاہتے ہیں ،

فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ معاشرے کےاندرانھوں نے امیرکیلیے الگ اورغریب کیلیےالگ قانون بنایا،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.