fbpx

یمن : مارب کے مغرب اور جنوب میں لڑائی کا دوبارہ آغاز، حوثیوں کا حملہ پسپا

صنعا :یمن : مارب کے مغرب اور جنوب میں لڑائی کا دوبارہ آغاز، حوثیوں کا حملہ پسپا،اطلاعات کے مطابق یمن میں‌ ایک بار پھر سخت لڑائی شروع ہوگئی ہے، ادھر یمن کے صوبے مارب میں شدید معرکوں کا سلسلہ جاری ہے۔ صوبے کے مغربی اور جنوبی حصے میں یمنی فوج کی حوثی ملیشیا کے ساتھ جھڑپیں پھر سے شروع ہو گئیں۔ یمنی فوج کو عوامی مزاحمت کاروں کی معاونت حاصل ہے۔

 

 

ایران نواز حوثیوں نے اتوار کے روز اور پیر کی صبح مارب کے مغربی محاذ الکسارہ پر متعدد عسکری گاڑیاں اکٹھا کر لیں۔ تاہم یمنی فوج کی توپوں نے ان گاڑیوں کو شدید گولہ باری سے نشانہ بنایا اور دراندازی کی کوشش ناکام بنا دی۔ العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں کے نمائندے کے مطابق اس دران میں حوثی ملیشیا کے 8 ارکان ہلاک ہو گئے۔

ادھر جنوبی محاذ پر یمنی فوج نے دو سمتوں سے کیے گئے حوثیوں کے حملے کو پسپا کر دیا۔ دریں اثنا فوجی توپوں نے مشرقی بلق میں تین عسکری اور ایک بکتر بند گاڑی تباہ کر دی۔

یمن میں آئینی حکومت کے حامی عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے جوبہ اور ملعاء میں حوثیوں کی عسکری کمک کو نشانہ بنایا۔ اس دوران میں درجنوں عسکری گاڑیاں تباہ کر دی گئیں۔

 

اس سے قبل عرب اتحاد کے ایک بیان میں بتایا گیا تھا کہ اتحاد کی سات کارروائیوں میں البیضاء صوبے کے عسکری کیمپ السوادیہمیں راکٹوں کے لانچنگ پیڈوں ، ہتھیاروں اور عسکری گاڑیوں کو حملے کا نشانہ بنایا گیا۔

زمینی ذرائع نے العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں کو بتایا کہ عرب اتحاد نے البیضاء سے آنے والی حوثیوں کی عسکری کمک کو نعمان ضلع میں تباہ کر دیا۔

یہ پیش رفت اُس مطالبے کے بعد سامنے آئی جس میں عرب اتحاد نے یمنی شہریوں پر زور دیا تھا کہ وہ البیضاء صوبے میں واقع السوادیہ عسکری کیمپ سے فوری طور پر نکل جائیں۔