سید یوسف رضا گیلانی نے پی ڈی ایم ملتان جلسہ کے حوالے سے بڑا دعوی کر دیا

پی ڈی ایم ملتان کا جلسہ نتیجہ خیز اور پچھلے سارے ریکارڈ توڑ کر نئی تاریخ رقم کرے گا،ہمیشہ کی طرح ملتان کا پی ڈی ایم کی تحریک میں بھی بڑا اور فیصلہ کن کردار ہوگا،نااہل حکمرانوں سے چھٹکارے کے لیے پی ڈی ایم میں شامل تمام جماعتیں متفق ہیں۔ سید یوسف رضا گیلانی

پی ڈی۔ایم ملتان کا جلسہ پچھلے تمام ریکارڈ توڑ کر نئی تاریخ رقم کرے گا۔ قلعہ کہنہ قاسم باغ اسٹیڈیم بھرنا ایک بڑا ٹارگٹ لیکن اس ٹارگٹ کو پیپلز پارٹی ھمیشہ کی طرح عبور کرے گی۔ جیسے ہر تحریک میں ملتان نے ایک تاریخی کردار ادا کیا اس مرتبہ بھی موجودہ سیلیکٹڈ حکومت کے خلاف پی۔ڈی۔ایم کی تحریک میں بھی ملتان کا میجر رول ھوگا۔ پی۔ڈی۔ایم ملتان جلسہ نتیجہ خیز ثابت ھوگا جو خطے کا بڑا جلسہ ھوگا ۔

ان خیالات کا اظہار سینئر وائس چیئرمین و سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے سابق ناظم خواجہ اشفاق صدیقی کی رھائشگاہ پر میڈیا ٹاک کرتے ھوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ پی۔ڈی۔ایم ملتان جلسے میں کرونا ایس۔او پیز کا بھرپور خیال کیا جائے گا اور احتیاطی تدابیر پر عملدرامد یقینی بنایا جائے گا۔ اپوزیشن اور حکومتی جلسے جاری ھیں اور خود جلسے کرنے والے حکمران اپوزیشن کو جلسے منعقد کرنے سے کیسے روک سکتے ہیں ۔

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہر جماعت کا اپنا منشور اپنا پروگرام ھے اور پی۔ڈی۔ایم کوئی انتخابی اتحاد نہیں۔ ائین و قانون, پارلیمنٹ کی بالا دستی اور مہنگائی بیروزگاری کے خلاف اور عوام کے معاشی حقوق, میڈیا کی ازادی, کسان مزدور ملازمین کے مسائل کے فوری حل اور موجودہ نااہل حکمرانوں سے نجات کیلئے پی۔ڈی۔ایم میں شامل تمام سیاسی جماعتیں متفق و متحد ھیں۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کسی بھی قوم کا قیمتی اثاثہ, ھر حکومت کو ساتھ لیکر چلنا چاہیئے اور ھم نے بھی اپنے دور اقتدار میں ھمیشہ متفقہ قانون سازی کی۔

انہوں نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے گراس روٹ لیول پر جاکر پارٹی کو مضبوط بنایا ھے لیکن گلگت بلتستان میں پری پول رگنگ حکومتی سلسلہ اور سرکاری مشینری کے بے دریغ استعمال کا حکومتی سلسلہ جاری ھے جس کے خلاف کوئی نوٹس نہیں لیا جا رھا۔ ایک اور سوال کے جواب میں انکا کہنا تھا کہ موجودہ سیلیکٹڈ حکمرانوں کے پاس اقتدار تو ھے لیکن کوئی اختیار نہیں ۔جبکہ نااہل حکمران پی۔ڈی۔ایم کے جلسوں سے گھبراہٹ اور شدید بوکھلاہٹ کا شکار ھو چکے ھیں۔

اس موقع پر سابق ممبر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر جاوید صدیقی, سٹی صدر ملک نسیم لابر, سٹی جنرل سیکرٹری اے۔ڈی بلوچ۔ چوھدری محمد یاسین, رئیس الدین قریشی, ایم سلیم راجہ, میر احمد کامران مگسی و دیگر پارٹی عہدیداران انکے ھمراہ موجود تھے ۔

دریں اثناء 30 نومبر پی۔ڈی۔ایم ملتان جلسہ سے قبل سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے ملتان شہر کے دونوں قومی اسمبلی کے حلقوں کا ھنگامی دورہ کرتے ھوئے مختلف مسالک کے وفات پانے والی شخصیات کے گھروں میں جاکر اظہار تعزیت کیا اور مرحومین کی مغفرت و بخشش اور بلندی درجات کیلئے دعا کی۔

پارٹی رہنما سید حیدر عباس گردیزی مرحوم کے انتقال پر انکے گھر جا کر انکے لواحقین, دربار شاہ شمس کے سجادہ نشیں مخدوم سید زاھد عباس شمسی مرحوم کی وفات پر انکے صاحبزادے سید عون عباس شمسی سے انکے گھر جاکر پھرعلامہ سعید فاروقی مرحوم کے گھر جاکر اور سابق ناظم عمر فاروق خان بابر کی بیوی کی وفات پر انکے گھر جاکر پھر سابق صوبائی صدر پیپلز پارٹی ملک سجاد مرحوم کے گھر جاکر انکے بیٹے ملک الطاف سے اور پھر سابق ناظم خواجہ اشفاق احمد صدیقی کی رھائشگاہ پر انکے عزیزوں کی وفات پر اظہار تعزیت کیا۔

اس موقع پر انہوں نے پٹھان برادری اور خواجہ صدیقی برادری کے زعما اور شخصیات سے ملاقات کی۔ حشمت بصیر صدیقی۔ قاسم صدیقی۔ خواجہ نادر صدیقی۔ حافظ امتیاز صدیقی۔ مظہر خورشید۔ خواجہ جہانگیر۔ یاسر امتیاز صدیقی۔ ملک فیاض۔ ملک امداد۔ طارق شاد۔ سید طارق عباس شسی۔ سید ظفر عباس شمسی۔ عباس رضا شمسی۔ حسن رضا شمسی۔ ھاشم خان بابر۔ شہباز ڈوگر و دیگر سے ملاقات کی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.