fbpx

یوسف رضا گیلانی نے سینیٹ میں مطالبہ کر کے عوام کے دل جیت لئے

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ کا اجلاس چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر صدارت ہوا

سینیٹر رضا ربانی نے دستور ترمیمی بل 2021 ایوان میں پیش کردیا ، سینیٹر رضا ربانی کا کہنا تھا کہ آئین کے 11آرٹیکل میں مختلف ترامیم تجویز کی گئیں ،سینیٹر اعظم سواتی کا کہنا تھا کہ رضا ربانی نے بل کےذریعے ایوان کی نمائندگی کی،علی محمد خان کا کہنا تھا کہ ترمیمی بل کے آرٹیکل57 میں ترمیم سے اختلاف ہے، سی سی آئی میں وزرائے اعلیٰ کی نمائندگی ہے،حلقے انتخاب میں 5سال رہائش ضروری ہونے کی رضاربانی کی تجویز سے اختلاف ہے،چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے آئینی ترمیمی بل متعلقہ کمیٹی کے سپر د کردیا

کورونا کی صورتحال اورکرونا سے بچاوَ کی ویکسین سے متعلق قرارداد ایوان میں پیش کر دی گئی، حکومت نے کوورنا سے متعلق قرارداد کی تحریر پر اعتراض کیا، علی محمد خان کا کہنا تھا کہ کورونا قومی مسئلہ ہے اس پر سیاست نہ کی جائے،قرارداد میں الفاظ پر اعتراض ہے،یوسف رضا گیلانی نے بھی کامران مرتضیٰ کوقرارداد دوبارہ تحریر کرنے کی ہدایت کی،جے یو آئی ف کے مرتضیٰ کامران نے قرارداد دوبارہ تحریر کرنے سے انکارکر دیا،سینیٹ میں کوورنا ویکسین مفت یا اصل قیمت پر فراہمی سے متعلق قرارداد منظورکر لی گئی،کامران مرتضیٰ کی قرارداد کے حق میں43 مخالفت میں31 ووٹ آئے، چیئرمین سیینیٹ صادق سنجرانی کا کہنا تھا کہ کوورنا وبا سے متعلق قرادر منظور قرار کی جاتی ہے،قرارداد کے متن میں کہا گیا کہ تمام ممالک میں شہریوں کو کرونا ویکسین لگائی جارہی ہے، پاکستان نے ویکسین منگوانے کیلئے پرائیوٹ کمپنی کو ٹھیکہ دیا ہوا،پاکستان میں ویکسی نیشن 8 ہزار 400روپے ہے، دیگر ممالک میں ویکسین کی قیمت 1500 روپے ہے، یہ آئین کے آرٹیکل 38 کی خلاف ورزی ہے،ریاست اپنے شہریوں کو بنیادی حقوق فراہم کرے،

سینیٹر ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ کورونا کو سیاست سے بالا تر رکھیں یہ نیشنل سیکیورٹی کا مسئلہ ہے ،کورونا سے 2 کروڑ 40 لاکھ ڈیلی ویجز ملازمین متاثر ہوئے ، ایک کروڑ 12 لاکھ افراد کو 12ہزار روپے امداد دی گئی ، احساس پروگرام میں سب سے زیادہ رقم سندھ میں تقسیم ہوئی ،کورونا ویکسین 4 مختلف ذرائع سے آرہی ہے ،حکومت ویکسین خرید رہی ہے اور ڈونیشن بھی موصول ہوئی ہیں پرائیویٹ سیکٹر بھی ویکسین منگوا رہا ہے ،کورونا ویکسین کی قیمت ڈرگ پالیسی کے مطابق مقرر کی گئی ،

سینیٹ میں قائد حزب اختلاف سید یوسف رضا گیلانی کا کہنا تھا کہ کورونا عالمی وبا ہے،ویکسین تمام شہریوں کی ضرورت ہے،ویکسی نیشن مفت میں کی جائے، اوپن مارکیٹ میں ویکسین کی قیمت کم رکھی جائے،

اک زرداری سب پر بھاری،آج واقعی ایک بار پھر ثابت ہو گیا

مبارک ہو، راہیں جدا ہو گئیں مگر کس کی؟ شیخ رشید بول پڑے

ن لیگ دیکھتی رہ گئی، یوسف رضا گیلانی کو بڑا عہدہ مل گیا

گیلانی کے ایک ہی چھکے نے ن لیگ کی چیخیں نکلوا دیں

بلاول میرا بھائی کہنے کے باوجود مریم بلاول سے ناراض ہو گئیں،وجہ کیا؟

ندیم بابر کو ہٹانا نہیں بلکہ عمران خان کے ساتھ جیل میں ڈالنا چاہئے، مریم اورنگزیب

ن لیگ بڑی سیاسی جماعت لیکن بچوں کے حوالہ، دھینگا مشتی چھوڑیں اور آگے بڑھیں، وفاقی وزیر کا مشورہ

مجھے کیوں نکالا…..کس کس جماعت کو پی ڈی ایم سے نکال دیا گیا؟

سینیٹ اجلاس ،پہلے خطاب میں یوسف رضا گیلانی کا حکومت کا ساتھ دینے کا اعلان،مولانا، مریم پریشان

سینیٹ میں خفیہ کیمرے لگنے پر چیئرمین سینیٹ کا بڑا اعلان،ن لیگ کے مطالبے پر پی پی کا ہنگامہ

آپ ایوان کا ماحول ٹھیک کرائیں، زبان ہمارے پاس بھی ہے،سینیٹ میں گرما گرمی

واضح رہے کہ پی ڈی ایم میں اختلافات پیدا ہو چکے ہیں ،سینیٹ میں پی پی نے ن لیگ کی مشاورت کے بغیر اپنا اپوزیشن لیڈر بنا لیا ہے جس سے پی پی پر ن لیگ ناراض ہے اور ن لیگ نے یوسف رضا گیلانی کو اپوزیشن لیڈر ماننے سے انکار کیا ہے، اب سینیٹ میں ن لیگ نے دیگر جماعتوں کے ساتھ ملکر الگ درخواست جمع کروا دی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.