زکربرگ کےبطورسی ای اومستعفیٰ ہونے کی خبر پر ترجمان میٹا کا بیان سامنے آ گیا

0
36

ٹیکنالوجی کپمنی میٹا کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) مارک زکر برگ کے مستعفی ہونے کی خبر سے متعلق ترجمان میٹا کا بیان سامنے آگیا۔

باغی ٹی وی : غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ایک نیوز ویب سائٹ نے خبر شائع کی تھی کہ 38 سالہ مارک زکربرگ 2023 میں عہدے سے استعفیٰ دے دیں گے۔

میٹا کا 11 ہزار ملازمین کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ

تاہم اب میٹا کے ترجمان اینڈی اسٹون نے ان تمام خبروں کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے ان کی تردید کی ہے-

ترجمان اینڈی اسٹون نے منگل کو ایک ٹویٹ میں کہا کہ چیف ایگزیکٹو آفیسر مارک زکربرگ کے اگلے سال استعفیٰ دینے کی رپورٹ غلط ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل مارک زکربرگ نے 9 نومبر کو ایک خط میں بتایا کہ کمپنی کے 13 فیصد عملے یا 11 ہزار سے زیادہ ملازمین کو فارغ کیا جارہا ہے۔

انہوں نے اپنے خط میں بتایا تھا کہ آج میں میٹا کی تاریخ میں کی جانے والی سب سے مشکل تبدیلی کے بارے میں بتانا چاہتا ہوں، میں نے اپنی ٹیم کا حجم 13 فیصد کم کرنے کا فیصلہ کیا ہے، ہم کمپنی کو زیادہ بہتر بنانے کے لیے مزید اقدامات بھی کررہے ہیں۔

5 سال میں 32 ارب ڈالر مالیت کی کمپنی بنانے والے نوجوان کا حیران کن زوال:27 ارب ڈوب…

زکر برگ کا کہنا تھا کہ کورونا کے آغاز میں دنیا نے فوری طور پر ای کامرس کی جانب رخ کیا جس سے آمدنی میں بے تحاشہ اضافہ ہوا۔ کئی افراد نے پیش گوئی کی کہ آمدنی میں یہ اضافہ مستقل ہوگا اور وباء کے بعد یہ سلسلہ جاری رہے گا۔ انہوں نے بھی یہی پیش گوئی کی، لہٰذا سرمایہ کاری میں اضافے کا فیصلہ کیا۔ بد قسمتی سے، اس نے ویسے کام نہیں کیا جیسے کہ توقع کی گئی تھی۔

زکر برگ کا کہنا تھا کہ اخراجات اور ملازمین کو کم کرتے ہوئے کمپنی کو مزید منظم بنایا جائے گا اور زیادہ تر وسائل کو محدود تعداد کی اعلیٰ ترجیحاتی جگہوں پر منتقل کیا جائے گا جس میں اشتہار، مصنوعی ذہانت اور میٹاورس شامل ہیں۔

ملازمین کو فارغ کیے جانے کی رپورٹ کے بعد میٹا کے حصص کی قدر میں 4 فیصد کمی آئی جب کہ میٹا کی 18 سالہ تاریخ میں پہلی بار ہے جب اتنے زیادہ ملازمین کو کمپنی سے فارغ کیا گیا۔

میٹا اور ٹوئٹر کے بعد ایمازون کا اپنے10 ہزار ملازمین کو برطرف کرنے کا ارادہ

Leave a reply