fbpx

ضمنی انتخابات، پی ٹی آئی بازی جیت گئی

ضمنی انتخابات، پی ٹی آئی بازی جیت گئی
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق تحریک انصاف کو پنجاب میں واضح برتری حاصل ہے

پنجاب میں ہونے والے ضمنی الیکشن کے غیر حتمی نتائج کے مطابق پی ٹی آئی دس سیٹیں اب تک جیت چکی ہے جبکہ سات پر آگے ہے، حکمران جماعت ن لیگ اب تک صرف ایک سیٹ پر کامباب ہوئی ہے

لاہور کی 4 ميں سے 3 نشستوں پر بھی پی ٹی آئی اميدوار جیت چکے ہیں، ايک نشست پر ليگی اميدوار جیتا ہے پی ٹی آئی نے لاہور کی تین، شیخوپورہ، ملتان، ساہیوال، خوشاب، لودھراں، لیہ اور ڈیرہ غازی خان کی نشستیں جیت لی ہیں۔

شیخوپورہ، پی پی 140 میں پی ٹی آئی نے میدان مار لیا لودھراں،پی پی 224 میں تحریک انصاف نے میدان مار لیا پی ٹی آئی کے عامر اقبال شاہ 69 ہزار 881 ووٹ لیکر کامیاب ،ن لیگ کے زوار حسین وڑائچ 56 ہزار 213 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے

سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہیٰ کا کہنا تھا کہ عمران خان نے جو حکمت عملی بنائی وہ کمال تھی،مونس الہٰی کو کریڈٹ دوں گا اس نے مجھے پکڑ کر رکھا کہ ہلنا نہیں ،عمران خان نے جو حکمت عملی بنائی وہ کمال بائی،میں سوچوں گا نہیں دو منٹ میں اسمبلی توڑ دوں گا،مشورہ ضروردوں گا لیکن عمل عمران خان کا ہوگا،ڈائیلاگ سیاست کا حصہ ہیں ہوتے رہتےہیں،

فواد چوھدری کا کہنا تھا کہ لوگوں نے پنجاب حکومت بنانے کیلئے ووٹ نہیں دیا، لوگوں نے عمران خان کے بیانیے کو ووٹ دیا ہے،ہماری طرف سے وزیر اعلیٰ کے امیدوار پرویز الہٰی ہی ہوں گے، موجودہ الیکشن کمیشن کے ساتھ جنرل الیکشن میں جانا زیادتی ہو گی، مسلم لیگ ن جنرل الیکشن کی طرف آجائے تو حالات بہتری کی طرف آجائیں گے

قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کی کامیابی ایک بڑا سرپرائز ہے، میرے خیال میں اب زیڈ اور وائی والی باتیں ختم ہونی چاہییں جن سیٹوں پر الیکشن ہوا 2018میں تحریک انصاف نے جیتی تھیں، موجودہ صورتحال میں حکومت پر مزید دباوبڑھے گا

تحریک انصاف کے منحرف اراکین کے ڈی سیٹ ہونے سے خالی ہونے والی 20 نشستوں پر ضمنی انتخاب کے لیے پولنگ کا وقت ختم ہو چکا ہے اور رزلٹ آنے کا سلسلہ جاری ہے، ان 20 نشستوں میں لاہور کی 4، راولپنڈی کی ایک، خوشاب کی ایک، بھکر کی ایک، فیصل آباد کی ایک، جھنگ کی 2، شیخوپورہ کی ایک، ساہیوال میں ایک، ملتان میں ایک، لودھراں میں 2، بہاولنگر میں ایک، مظفر گڑھ میں 2، لیہ میں ایک اور ڈیرہ غازی خان کی ایک نشست شامل ہے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے مطابق مجموعی طور پر 45 لاکھ 79 ہزار آٹھ سو 98 رجسٹرڈ ووٹرز اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے۔ ان 20 حلقوں میں کُل 3 ہزار 131 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے گئے، مردانہ پولنگ اسٹیشنز کی تعداد 731، خواتین کے لیے 700 جبکہ 1700 مشترکہ پولنگ سٹیشنز قائم کیے گئے ہیں۔