بغیر ثبوت دھاندلی کے الزامات لگاتے ہو!ٹرمپ کے برےدن آگئے، پریس کانفرنس روک دی گئی

واشنگٹن : بغیر ثبوت دھاندلی کے الزامات لگاتے ہو!ٹرمپ کے برےدن آگئے، پریس کانفرنس روک دی گئی ،اطلاعات کے مطابق امریکی نیوز چینلز نے بغیر ثبوت دھاندلی کے الزامات لگانے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پریس کانفرنس کی براہ راست نشریات روک دیں۔

امریکی صدارتی انتخاب کے بعد گزشتہ روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پہلی بار پریس کانفرنس کی اور یہ پریس کانفرنس 17 منٹ تک جاری رہی۔

پریس کانفرنس کے دوران امریکی صدر نے ایک بار پھر ڈیموکریٹس پر دھاندلی کے الزامات لگائے جس پر امریکی نشریاتی اداروں نے ان کی براہ راست تقریر کٹ کر دی۔

اس دوران امریکی ٹی وی چینل ایم ایس این بی سی کے اینکر برین ولیمز نے ٹرمپ کی تقریر کو کٹ کرتے ہوئے کہا کہ ’ہمیں ایک بار پھر غیر معمولی صورتحال کا سامنا ہے جہاں ہمیں نہ صرف امریکی صدر کے خطاب کے دوران مداخلت کرنی پڑرہی ہے بلکہ ان کی تصحیح بھی کرنی پڑ رہی ہے‘۔

اس کے علاوہ سی این این کے اینکر نے بھی کہا کہ یہ امریکا کے لیے افسوسناک رات ہے کہ امریکی صدر لوگوں پر الیکشن چرانے کا الزام لگارہے ہیں اور یہ جھوٹ پر جھوٹ بول رہے ان کے پاس الیکشن چرانے کے الزامات کے کوئی ثبوت نہیں ہیں۔

خیال رہے کہ امریکا میں 3 نومبر کو ہونے والے صدارتی انتخاب کے نتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے اور اب صرف 5 ریاستوں پنسلوانیا، ایریزونا، جارجیا، نیواڈا اور الاسکا کے نتائج آنا باقی ہیں۔

ان پانچ میں سے صرف الاسکا میں ڈونلڈ ٹرمپ کو بائیڈن پر کافی زیادہ برتری حاصل ہے تاہم اس ریاست کے الیکٹورل ووٹس صرف 3 ہیں لہٰذا اس سے بائیڈن کو زیادہ فرق نہیں پڑے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.