fbpx

کرونا ویکسین کی تیاری کے لئے امریکہ مسلمان سائنسدانوں کا محتاج

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق امریکی دوا ساز کمپنی فائزر نے کرونا ویکیسن کی تیاری میں کامیابی کا اعلان کیا ہے تا ہم خبر ملی ہے کہ کرونا ویکسین کی تیاری میں مسلمان سائنسدان کا اہم کردار رہا ہے

ترک نژاد مسلم سائنسدانوں نے مشہور امریکی دواساز کمپنی فائزر کی کامیاب کرونا ویکسین کی تیاری میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ کمپنی نے حال ہی میں اپنی کامیابی کا اعلان کیا اور بتایا کہ بڑے پیمانے پر ٹرائل میں یہ ویکسین 90 فیصد سے زیادہ مؤثر ثابت ہوئی ہے۔

امریکی کمپنی کی جانب سے کرونا کے خلاف ویکسین کو تیار کرنے والے سائنسدان ترک نژاد مسلمان ڈاکٹر اوگر شاہین اور ان کی اہلیہ ڈاکٹر اوزلم توریسی ہیں۔ یہ ڈاکٹر جوڑا جرمنی کی شہرت رکھتا ہے۔ 55 سالہ ڈاکٹر شاہین ترک وطن چھوڑ کر جرمنی میں مقیم ہوگئے تھے۔ ان کے ساتھ 53 سالہ ڈاکٹر توریسی نے طبی تحقیقی کام کو آگے بڑھایا ہے۔ اس جوڑے نے جرمنی میں ٹیکنالوجی کی اسٹارٹ اپ کمپنی BioNTech شروع کی تاکہ میسینجرٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے علاج کو فروغ دیا جاسکے۔

پنجاب میں بھی دوبارہ کرونا کیسز میں اضافہ ہو سکتا ہے، خطرے کی گھنٹی

کرونا پھیلاؤ روکنے کے لئے این سی او سی کا عوام سے مدد لینے کا فیصلہ

کرونا وائرس ، معاون خصوصی برائے صحت نے ہسپتال سربراہان کو دیں اہم ہدایات

کرونا وائرس لاہور میں پھیلنے کا خدشہ، انتظامیہ نے بڑا قدم اٹھا لیا

تیونس کے مسلم سائنسدان ڈاکٹر ایم محمد سلاوی کرونا ویکسین کے حوالہ سے کام کرنے والی ٹیم کے لیڈر ہیں،امریکی صدر ٹرمپ بھی اعلان کر چکے ہیں کہ کوروناوائرس ویکسین کو تیزی سے تیار کرتے ہوئے امریکہ میں تقسیم کیا جائے گا۔

امریکی کمپنی فائزر نے امریکہ اور پانچ دوسرے ممالک میں تقریباً 44 ہزار افراد پر اپنی نئی ویکسین کی جانچ کی ہے اور اس کی بنیاد پر ابتدائی نتائج جاری کیے گئے ہیں۔ کمپنی کے مطابق صرف 94 افراد کرونا کا شکار ہوئے ہیں۔ البتہ فائزر نے ان کیسوں کے بارے میں مزید کوئی تفصیل جاری نہیں کی .

کرونا ویکسین کا راز ہیکرز کی جانب سے چوری کرنے کی کوشش ناکام

 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.