fbpx

فیس بک نے نفرت اور نسل کی بنا پر نازیبا جملوں کو روکنے کا ایک اہم ٹول پیش کردیا

فیس بک نے آپ کی پوسٹ پر کسی مطلوبہ شخص کا طنزیہ یا ہراساں کرنے کا تبصرہ یا کمنٹس روکنے کا آپشن پیش کردیا –

باغی ٹی وی : فیس بک پر کھلاڑیوں اور دیگر شخصیات نے اس جانب اپنی توجہ مبذول کرائی تھی کیونکہ ان کی پوسٹ پر رنگ، نسل اور دیگر تعصبات کی بنیاد پر ہر شخص نے اپنا منہ اور کمنٹس کا دہانہ کھول رکھا تھا فیس بک نے اب اپنے پلیٹ فارم پر نفرت اور نسل کی بنا پر نازیبا جملوں کو روکنے کا ایک اہم ٹول پیش کردیا ہے۔

کمپنی کے مطابق اس ٹول سے لوگ ایک جانب تو پوسٹ کو تمام افراد، مخصوص افراد یا گروپ کے لیے منتخب کرسکتےہیں۔ اس طرح یہ پوسٹ وہی دیکھ سکیں گے اور عوامی پوسٹ پر بھی مخصوص افراد کو کمنٹس سے روکا جاسکے گا۔

فیس بک نے اپنے اعلامیے میں کہا کہ ’لوگوں کو عوامی پوسٹ پر مزید کنٹرول فراہم کرکے، ہم پرامید ہیں کہ وہ اپنے مندرجات میں مدد لیتے ہوئے غیرضروری مداخلت کو روک سکیں گے-

فیس بک نے مزید کہا کہ اگر آپ عوامی شخصیت، کوئی تخلیق کار یا کسی برانڈ سے وابستہ ہیں تو آپ بھی کمنٹ کرنے والے افراد کو محدود رکھ سکتےہیں اس سے آپ کا تحفظ بڑھے گا اور آپ کمیونٹی میں بامعنی گفتگو شروع کرسکیں گے۔

خیال رہے کہ برطانوی فٹبال کھلاڑیوں کو فیس بک پر ایسے ہی مسائل کا سامنا تھا اور وہ اس پلیٹ فارم سے دور ہوتے جارہے تھے۔ تاہم کئی کھلاڑیوں نے کہا تھا ان کی پوسٹ پر نسلی منافرت کے کمنٹس روکنے میں فیس بک ناکام رہا ہے اس کے بعد ہی فیس بک نے یہ قدم اٹھایا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.