پنجاب میں کالعدم تنظیموں کے خلاف کاروائی تیز کرنے کا حکم

نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب حکومت نے کالعدم تنظیموں کے خلاف کاروائیاں تیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے.

کالعدم تنظیموں کے خلاف پنجاب حکومت نے کاروائی کی تفصیلات بتا دیں

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے سلسلہ میں پنجاب حکومت نے محکمہ داخلہ سے جواب طلب کیا ہے کہ وہ کالعدم تنظیموں کے حوالہ سے کی جانے والی کاروائیوں کے بارے میں آگاہ کریں، محکمہ داخلہ کو ہدایت بھی کی گئی ہے کہ پنجاب کے تمام اضلاع میں کالعدم تنظیموں کے خلاف کاروائیاں تیز کی جائیں.

کالعدم تنظیموں کے مزید مدارس اور سکول حکومتی تحویل میں

محکمہ داخلہ کو مزید کہا گیا ہے کہ پنجاب بھر میں کالعدم تنظیموں کی کڑی نگرانی کی جائے.

کالعدم تنظیموں سے روابط، گیارہ مزید تنظیموں پر حکومت نے پابندی لگا دی

کالعدم تنظیموں کے خلاف کاروائی کے حوالہ سے بات کرتے ہوئے صوبائی وزیر اطلاعات صمصام بخاری کا کہنا تھا کہ کالعدم تنظیموں کے ادارے پنجاب حکومت چلائے گی، تعلیم اور صحت کے ادارے تحویل میں لے لئے ہیں. صمصام بخاری نے مزید کہا کہ پنجاب حکومت نے چند ہفتوں میں متعدد افراد کو حراست میں لیا ہے. کالعدم تنظیموں کے چندہ اکٹھا کرنے والےافراد کوسی ٹی ڈی نےحراست میں لیاہے، 581 اثاثہ جات قبضے میں لے کر متعلقہ سرکاری محکموں کے حوالے کر دیے،انہوں نے کہا کہ پنجاب نے دیگر صوبو ں کی نسبت بہتر کارکردگی دکھائی .

کالعدم جماعۃ الدعوۃ کے سربراہ حافظ محمد سعید کے خلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.