ساہیوال:پرنسپل میڈیکل کالج زاہد کمال صدیقی نے تھیلسیمیا سے بچاؤ کا طریقہ بتادیا

ساہیوال:نیشنل تھلیسیمیا پریونشن ڈے پرساہیوال میڈیکل کالج میں تھلیسیمیا کی بیماری سے بچاؤ سے متعلق آگہی سیمینار کا انعقاد،بیماری سے بچاؤ کے لئے شادی سے پہلے تھلیسیمیا ٹیسٹ لازمی قرار دینے کی سفارش،عام آدمی میں بیماری سے متعلق شعور اجاگر کیا جائے۔ مقررین کا اظہار خیال-تفصیلات کے مطابق ساہیوال میڈیکل کالج کے پتھالوجی ڈیپارٹمنٹ اور پنجاب تھلیسیمیا پریونشن پروگرام کے باہمی اشتراک سے کالج میں آگہی سیمینار منعقد ہوا جس میں ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل سٹاف کے علاوہ طلبا و طالبات کی کثیر تعداد نے شرکت کی – تقریب کے مہمان خصوصی پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر زاہد کمال صدیقی تھے جبکہ ایم ایس ڈی ایچ کیو ڈاکٹر عبدالوحید، شعبہ پلمونولوجی کے سربراہ ڈاکٹر محمد وسیم،شعبہ امراض بچگاں کے سربراہ ڈاکٹر ساجد مصطفی، شعبہ گائنی کی سربراہ ڈاکٹر صفیہ اظہار،اسسٹنٹ پروفیسر پتھالوجی ڈیپارٹمنٹ ڈاکٹر آمنہ عروج اور پروگرام کے ریجنل کو آرڈینیٹر سہیل شکور نے بھی سیمینار میں شرکت کی -مقررین نے زور دیا کہ بچوں میں تھلیسیمیا کی بیماری روکنے کے لئے ضروری ہے کہ شادی سے پہلے ٹیسٹ لازمی قرار دیا جائے اور اس سلسلے میں عوام میں خصوصی آگہی مہم چلائی جائے تاکہ اس خطرناک بیماری کو روکا جا سکے -پرنسپل ڈاکٹر زاہد کمال صدیقی نے شعبہ طب سے وابستہ افراد پر زور دیا کہ وہ عوام کو اس بیماری کی سنگینی سے آگاہ کریں اور ان میں بچاؤ کے لئے احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کا شعور اجاگر کریں -مزید براں ساہیوال میڈیکل کالج میں کورونا کے مریضوں کے علاج کے جدید رجحانات پر بھی سیمینار منعقد ہوا جس میں ڈاکٹرز نے اپنے حالیہ تجربات اور ریسرچ سے کورونا مریضوں کے علاج بارے تفصیلی روشنی ڈالی -سیمینار کا انعقاد شعبہ پلمونولوجی نے کیا تھا جس میں ڈیٹرئٹ میڈیکل سنٹر امریکہ کے آئی سی یو سپشلسٹ ڈاکٹر تنویر حسین نے کورونا کے موثر علاج بارے اظہار خیال کیا – سیمینار میں ڈاکٹر محمد وسیم، ڈاکٹر عون بن شاہد،ڈاکٹر شاہد پرویز،ڈاکٹر سرفراز خان اور ڈاکٹر محمد شاہد نے بھی شرکت کی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.