آصف زرداری آج پھر گرفتار نہیں ہوں گے، بڑی خبر آ گئی

0
37

سابق صدر آصف زرداری اور اس کی ہمشیرہ فریال تالپور کی اگلے دو ہفتوں تک کے لئے گرفتار نہیں کیا جائے گا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اسلام آبا دہائیکورٹ میں آصف زرداری کی عبوری ضمانت میں توسیع کی درخواست پر سماعت ہونی ہے. آصف زرداری عدالت پہنچ چکے ہیں. چیئرمین نیب نے وارنٹ گرفتاری جاری کیے ہیں ،.نیب حکام بکتر بند گاڑی لے کر عدالت کے باہر موجود ہیں. تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کو آج پھر گرفتار نہیں کیا جائے گا.دو ہفتوں تک انہیں گرفتار نہیں کیا جا سکتا

آصف زرداری گرفتار ہوں گے یا نہیں؟ آج ہو گا فیصلہ

آصف علی زرداری رٹ پٹیشن نمبر 1169 عبوری ضمانت میں توسیع کے لئے آج ساتویں بار جبکہ رٹ پٹیشن نمبر 1834 عبوری ضمانت میں توسیع کے لئے پانچویں بار ہائی کورٹ میں پیش ہوئے ہیں ۔واضح رہے کہ کیس میں آصف زرداری،فریال تالپورکی عبوری ضمانت میں 6 بار توسیع کی گئی، آصف زرداری اور فریال تالپور پر جعلی اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کاالزام ہے جبکہ جعلی اکاؤنٹس کا مقدمہ احتساب عدالت میں زیر التوا ہے۔

 

عید کی چھٹیاں ختم، زرداری سمیت نیب کس کس کو کر رہا ہے گرفتار، اہم ترین خبر آ گئی

 

آصف زرداری کی ضمانت میں توسیع

 

ہم ایسے کام نہیں کرتے….زرداری نے ایسا کیوں کہا؟

واضح رہے کہ منی لانڈنگ کیس 2015 میں پہلی دفعہ اسٹیٹ بینک کی جانب سے اس وقت سامنے‌آیا جب بینک کی جانب سے ایف آئی اے کو مشکوک ترسیلات کی رپورٹ یعنی ایس ٹی آرز بھیجی گئیں۔ ایف آئی اے نے ایک اکاؤنٹ سے مشکوک منتقلی کی ایف آئی آر درج کی جس کے بعد کئی جعلی اکاؤنٹس سامنے آئے جن سے مشکوک منتقلیاں کی گئیں۔ معاملہ پاکستان کی سب سے بڑی عدالت سپریم کورٹ تک پہنچا تو اعلیٰ عدالت نے اس کی تحقیقات کے لیے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم ( جے آئی ٹی) تشکیل دی جس نے گزشتہ برس 24 دسمبر کو عدالت عظمیٰ میں اپنی رپورٹ جمع کرائی جس میں 172 افراد کے نام سامنے آئے۔ جے‌آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں آصف زرداری اور اومنی گروپ کو جعلی اکاونٹس سے فائدہ اٹھانے کا ذمہ دار قرار دیا اور ان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی. جعلی اکاونٹس کیس میں آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور سے بھی تحقیق کی گئی. بلاول زرداری نے بھی جے آئی ٹی کو تحریری جواب بھجوایا تھا.سپریم کورٹ نے 7 جنوری 2019 کو اپنے فیصلے میں نیب کو حکم دیا تھا کہ وہ جعلی اکاؤنٹس کی از سر نو تفتیش کرے اور 2 ماہ میں مکمل رپورٹ پیش کرے جب کہ عدالت نے جے آئی ٹی رپورٹ بھی نیب کو بجھجوانے کا حکم دیا۔ سپریم کورٹ نے حکم دیا تھا کہ تفتیش کے بعد اگر کوئی کیس بنتا ہے تو بنایا جائے۔ نیب نے 7 جنوری کو ہی جعلی اکاؤنٹس کیس کی تحقیقات کے لیے کمبائنڈ انویسٹی گیشن ٹیم (سی آئی ٹی) تشکیل دی جس کی سربراہی ڈی جی نیب راولپنڈی کو دی گئی۔سابق صدر آصف زرداری اور بلاول زرداری نے 20 مارچ کو نیب کی کمائنڈ انویسٹی گیشن کے سامنے پیش ہو کر بیان ریکارڈ کرایا۔نیب راولپنڈی نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں تین ریفرنسز تیار کر کے نیب ہیڈ کوارٹر بھجوائے اور چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت نیب ایگزیکٹو بورڈ نے 2 اپریل کو جعلی اکاؤنٹس کیس میں پہلا ریفرنس اومنی گروپ کے چیف ایگزیکٹو عبدالغنی مجید اور دیگر کے خلاف دائر کرنے کی منظوری دی۔

Leave a reply