آسٹریلیا:دوران پرواز نماز پڑھنےاوردھماکہ خیز مواد رکھنےکی دھمکی دینے پر پاکستانی گرفتار

باضابطہ طور پر علی عارف کی ضمانت بھی مسترد کردی گئی
0
45
Police

سڈنی: آسٹریلوی پولیس نے 55 سالہ پاکستانی نژاد آسٹریلوی شہری محمد علی عارف پر ملائیشیا ائیر لائنز کی پرواز میں مبینہ طور پر دھماکہ خیز مواد رکھنے کا دعویٰ کرنے پر فرد جرم عائد کردی۔

باغی ٹی وی : "ڈیلی میل” کے مطابق ملائیشیا ائیرلائن کے ایک مسافر نے جو مبینہ طور پر وفاقی پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہونے سے قبل ہاتھا پائی کی،عارف نے عدالت کے سامنے آنے کے لیے سوری ہلز پولیس اسٹیشن میں اپنا سیل چھوڑنے سے انکار کر دیا جس سے اپنی پہلی عدالت میں پیشی میں تقریباً تین گھنٹے کی تاخیر کر دی مجسٹریٹ گریگ گروگن کا کہنا تھا کہ اگر وہ عدالت کے سامنے آنا چاہتے ہیں تو انہیں اسے سیل سے نکالنا پڑے گا عدالت نے کیس کی سماعت بدھ تک ملتوی کردی جب کہ باضابطہ طور پر علی عارف کی ضمانت بھی مسترد کردی گئی ہے۔

آسٹریلین فیڈرل پولیس نے ایک بیان میں کہا کہ پولیس نے علی عارف پر طیارے کو نقصان پہنچانے کے خطرے کے بارے میں جھوٹا بیان دینے اور کیبن کریو کی حفاظتی ہدایات پر عمل نہ کرنے کا الزام عائد کیا ہےاس جرم میں زیادہ سے زیادہ 10 سال قید اور 9 ہزار 730 ڈالر سے زیادہ جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے۔

موسمیاتی تبدیلیاں،ماہرین نے یو اے ای کو انتباہ جاری کر دیا

کوالالمپور جانے والی پرواز MH122 نے ہنگامی طور پر سڈنی ہوائی اڈے پر واپسی کی اور مسافروں کو کئی گھنٹوں تک جہاز پر انتظار کرنا پڑاپیر کی سہ پہر سڈنی سے ملائیشیا کے لیے روانہ ہوئی تھی اور تقریباً تین گھنٹے بعد سڈنی واپس آئی تھی اس واقعے کی وجہ سے 32 پروازیں منسوخ کردی گئیں اور دیگر پروازیں 90 منٹ تک تاخیر کا شکار ہوئیں جب کہ بین الاقوامی پروازوں کی منسوخی نہیں ہوئی۔حکام نے طیارے کو محفوظ سمجھے جانے کے بعد مسافروں اور عملے کو جہاز سے باہر نکال لیا اور اس علی عارف کو گرفتار کر لیا تھا۔

ایک مسافر کی جانب سے بنائی گئی ویڈیو میں علی عارف طیارے کے درمیان نماز پڑھتے ہوئے نظر آرہے ہیں جب کہ دیگر مسافر دور سے انہیں دیکھ رہے ہیں۔

خدا کیلئے لڑکیوں کے اسکول کھول دو،سینئیر صحافی طالبان کے دفتر پہنچ گئیں

Leave a reply