fbpx

کرونا ایس او پیز پر عملدرآمد نا ہو سکا،کیسز بڑھنے کا خدشہ

قصور
کرونا وباء کے تیزی سے بڑھنے پر بھی لوگ احتیاط کرنے سے قاصر،ضلعی انتظامیہ کی جانب سے بھی ابھی تک کوئی خاطر خواہ اقدامات نہیں کئے گئے شرع 13 فیصد ہونے پر مذید کیسز بڑھنے کا خدشہ،شہر کے علاوہ گاؤں دیہات میں ایس او پیز پر عملدرآمد زیرو فیصد

تفصیلات کے مطابق ملک بھر کی طرح قصور میں بھی کرونا کیسز خطرناک حد تک بڑھ گئے ہیں جس سے 5 اساتذہ کرام کی وفات ہو چکی ہے جبکہ کل چھانگا مانگا میں کرونا کیسز نکلنے پر سکول کو بند کیا گیا ہے
قصور میں کرونا کی شرح 13 فیصد تک پہنچ چکی ہے مگر شہریوں کی جانب سے ایس او پیز پر عمل درآمد نا ہونے کے برابر ہے تاہم ضلعی انتظامیہ کی جانب سے بھی محض قصور شہر و باقی شہروں میں ایک آدھ کاروائی کرکے سکون قلبی خود کو و لوگوں کو دیا جا رہا ہے حالانکہ 32 لاکھ آبادی میں سے زیادہ تر لوگ قریبی دیہات میں رہتے ہیں جہاں پر ایس او پیز پر عملدرآمد زیرو ہے اور ابھی تک کسی ایک بھی گاؤں دیہات میں ایس او پیز پر عملدرآمد کروانے کیلئے انتظامیہ نے کوئی قدم نہیں اٹھایا
سیاسی،سماجی،صحافی و مذہبی شحضیات کا کہنا ہے کہ اگر ایس او پیز پر عملدرآمد کرنے میں سستی کی گئی تو حالات مذید خراب ہو سکتے ہیں لہذہ ضلعی انتظامیہ سختی سے شہروں کیساتھ دیہات میں بھی ایس او پیز پر عملدرآمد کروائے تاکہ اس موذی وبائی مرض سے بچا جسکے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.