عام انتخابات کے لیے ملک بھر میں 5 لاکھ 91 ہزار 106 اہلکاروں کی ضرورت،الیکشن کمیشن کا خط

0
129

الیکشن کمیشن نے سیکریٹری داخلہ کو خط لکھ دیا جس میں پاک فوج کی اگلے الیکشنز میں پولنگ اسٹیشنز پر تعیناتی کےلیے درخواست کی گئی،خط میں سیکریٹری الیکشن کمیشن عمر حمید نے لکھا ہے کہ الیکشنز کے انعقاد کے لیے اہلکاروں کی کمی کا سامنا ہے، اس لیے فوج اور سول آرمڈ فورسز اسٹیٹک اور بطور کوئیک رسپانس فورس تعینات کی جائے۔ الیکشن کمیشن کے مراسلہ میں مزید کہا گیا ہے کہ تعیناتی کو سیکیورٹی اہلکاروں کی کمی پورا کرنے کیلئے یقینی بنایا جائے اور 7 دسمبر سے پہلے الیکشن کمیشن کو اس کے متعلق کنفرمیشن دی جائے۔ مراسلے میں مزید کہا گیا ہے کہ ملک میں امن و امان کی نازک صورتحال کے پیش نظر ایسا کیا جائے۔
الیکشن کمیشن کے مراسلہ کے مراسلے کے مطابق اسلام آباد میں اس وقت 9 ہزار سیکیورٹی اہلکاروں کی ضرورت ہے۔الیکشن کمیشن کے مراسلہ میں بتایا گیا ہے کہ اسلام آباد میں اس وقت ساڑھے 4 ہزار اہلکاروں کی کمی ہے۔ 1500 ایف سی، 1500رینجرز اور 1500 آزاد کشمیر پولیس کے اہلکاروں کی ضرورت ہے۔ مراسلہ کے مطابق پنجاب میں 2 لاکھ 77 ہزار 610 اہلکاروں کی ضرورت ہے۔ پنجاب میں اس وقت ایک لاکھ 8 ہزار 5 سو پولیس اہلکار دستیاب ہیں۔
الیکشن کمیشن کے مراسلہ کے مطابق پنجاب میں ایک لاکھ 69 ہزار 110 اہلکاروں کی کمی ہے۔ اسکے علاوہ خیبرپختونخوا میں ایک لاکھ 49 ہزار 77 اہلکاروں کی ضرورت ہے، خیبرپختونخوا کے پاس اس وقت 92 ہزار 360 اہلکار موجود ہیں جبکہ خیبر پختونخوا کو 56 ہزار 717 اہلکاروں کی کمی کا سامنا ہے۔
جاری مراسلے کے مطابق سندھ میں اس وقت ایک لاکھ 23 ہزار سکیورٹی اہلکاروں کی ضرورت ہے، سندھ کے پاس اس وقت ایک لاکھ 5 ہزار پولیس اہلکار موجود ہیں جبکہ سندھ میں اس وقت 33 ہزار 462 اہلکاروں کی کمی ہے۔اسی طرح بلوچستان میں اس وقت 31 ہزار 919 اہلکاروں کی ضرورت ہے،، بلوچستان میں 18 ہزار 150 اہلکار دستیاب ہیں جبکہ بلوچستان میں اس وقت 13 ہزار 769 اہلکاروں کی ضرورت ہے۔ مراسلے میں کہا گیا ہے الیکشن کمیشن کے فیصلے کے مطابق اہلکاروں کی کمی کو پاکستان آرمی اور سول آرمڈ فورسز کے ذریعے پورا کیا جائے، ملک میں امن و امان کی نازک صورتحال کے پیش نظر پاکستان آرمی اور سول آرمڈ فورسز کو پولنگ اسٹیشن پر اسٹیٹک موڈ تعیناتی کے لیے ریکوزیشن کیا جائے۔

Leave a reply