fbpx

عمران خان ملک میں افرا تفری چاہتا ہے. وزیر داخلہ رانا ثںاءاللہ

عمران خان جو مہم جوئی کررہے ہیں وہ اس کے فتنہ کیخلاف آخری کیل ثابت ہوگی کیونکہ عمران خان اس ملک میں افرا تفری چاہتا ہے وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ

وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ سابق وزیر اعظم عمران خان ناصرف اس ملک میں افرا تفری چاہتا ہے بلکہ اس ملک کے نوجوانوں کو گمراہ کرنا چاہتا ہے اور اس کے ساتھ ہی یہ قوم کو تقسیم کرنا چاہتا ہے لہذا اس لیئے اس کے تابوت میں میں آخری کیل ٹھوکیں گے اور اس فتنے کا قلع قمع کریں گے.

وزیر داخلہ نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وضاحت کی کہ اگر عمران خان آئین کے مطابق ایک پرامن احتجاج کرنا چاہیں گے تو پھر ان کا حق ہے ضرور پرامن طریقے سے اپنا احتجاج کریں لیکن قانون کو توڑنے کی اجازت کسی کو نہیں ہوگی. رانا ثناء نے مزید کہا کہ احتجاج کیلئے جو جگہیں مقرر ہیں وہی احتجاج کرنے دیں گے جسے ہائیکورٹ یا سپریم کورٹ کے طے کردہ احتجاجی گراؤنڈ ہیں لیکن ریڈزون اور ڈی چوک میں کسی صورت داخل نہیں ہونے دیں گے. اور ان کے پاگل پن کا اعلاج کریں گے.

ایکسپریس کے مطابق "گزشتہ روز پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے وفاقی وزیر داخلہ کو براہ راست دھمکی دیتے ہوئے کہا تھا کہ اس مرتبہ رانا ثنا اللہ کو اسلام آباد میں چھپنے کی جگہ نہیں ملے گی۔ پارٹی رہنماؤں سے خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ 25 مئی کو ہماری تیاری نہیں تھی لیکن اس مرتبہ بھرپور تیاری کے ساتھ آئیں گے۔”

عمران خان نے کہا تھا کہ "دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہمارے حکمرانوں نے 80 ہزار پاکستانیوں نے جانوں کا نذرانہ پیش کیا کیونکہ کسی اور کی جنگ میں شامل ہوئے اور ملک بھی تباہ ہوا اور قبائلی علاقوں میں 400 ڈرون حملے ہوئے۔ انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے قائد اور پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین کو مخاطب کرکے کہا تھا کہ نواز شریف اور آصف علی زرداری دونوں غلام ہیں جن کا پیسہ ملک سے باہر ہے، ان دونوں نے ڈرون حملوں کی اجازت دی۔”

چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ "اب موجودہ حکومت گندم اور تیل لینے کی بات کررہی ہے جبکہ ہم 5 ماہ قبل ہی کرچکے تھے لیکن سازش کے ذریعے ہمارے حکومت ختم کردی گئی۔”