جوہری معاہدے میں اقدام نہیں نتیجے اہمیت کے حامل ہوتے ہیں، ایرانی وزیرخارجہ

ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے کہا ہے کہ جاپان کے وزیراعظم 12 جون کو ایران کا دورہ کریں گے

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ایران کے وزیرخارجہ جواد ظریف نے تہران میں ایک تقریب کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جوہری معاہدے میں اقدام نہیں بلکہ نتیجے اہمیت کے حامل ہوتے ہی. یورپی ممالک اورجوہری معاہدے کے دیگر رکن ممالک پر یہ ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ ایران کے اقتصادی روابط کو معمول پر لائیں۔ جواد ظریف کا مزید کہنا تھا کہ مغربی ممالک کی مداخلت پسندانہ پالیسیوں کا نتیجہ سوائے نقصان کے اور کچھ نہیں نکلا .انہوں نے مزید کہا کہ جاپانی وزیراعظم اور جرمن وزیر‌خارجہ تہران کا دورہ کریں گے. ایران کے صدرحسن روحانی بشکیک اور دوشنبہ کا دورہ کریں گے اور حکام سے ملاقاتیں کریں گے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.