نیب کا حساس اداروں کے افسران کی خدمات لینے کا فیصلہ

نیب میں تمام خالی آسامیوں پرفوری تقرریاں کردی جائیں گی
0
25
nab

اسلام آباد: نیب نے کرپشن کے خلاف کارروائیوں کے لیے حساس اداروں کے افسران کی خدمات لینے کا فیصلہ کیا ہے-

باغی ٹی وی: نیب نے اربوں روپے مالیت کے کرپشن ریفرنسز دوبارہ کھولنے کے بعد کرپشن کے خلاف کارروائیوں کے لیے حساس اداروں کے افسران کی خدمات لینے کا فیصلہ کرلیا ہے،اس حوالے سے چیئرمین نیب کی منظوری سے خط بھی لکھ دیا گیا ہےنیب نے اپنے خط میں اہم عہدوں پر تقرریوں کے لیے ڈیپوٹیشن پر حساس اداروں سے افسران مانگ لیے ہیں۔

نیب حکام کے مطابق نیب میں تمام خالی آسامیوں پرفوری تقرریاں کردی جائیں گی، اور ڈپٹی چیئرمین نیب اورپراسیکیوٹرجنرل کے عہدوں پرمستقل افسران کا تقررکردیا جائے گا، حساس اداروں کے افسران آئندہ چند روز میں نیب میں کام شروع کردیں گے۔

آج تو ٹرک بھر کر نیب کیسز کا ریکارڈ آ رہا ہے،جج احتساب عدالت

واضح رہے کہ 15 ستمبر کو سابق چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں سپریم کورٹ کی تین رکنی بینچ نے عمران خان کی درخواست پر نیب ترامیم کوکالعدم دےدیا تھا،سپریم کورٹ کے احکامات کےبعد نیب عدالتوں میں آصف زرداری، یوسف رضاگیلانی، شاہد خاقان عباسی، اسحاق ڈار شرجیل انعام میمن ، ڈاکٹر عاصم حسین، مصطفی کمال کے کیسز سمیت متعدد کیسز واپس آگئے ہیں نیب نے اسلام آباد کی احتساب عدالت میں80 کرپشن ریفرنسز دوبارہ کھولنے کی درخواست دائر کی ہے۔

آصف علی زرداری، نواز شریف، مراد علی شاہ، شاہد خاقان عباسی سمیت 80 نیب کیسز …

نیب نے آصف علی زرداری، یوسف رضا گیلانی، مراد علی شاہ، شاہد خاقان عباسی، اسحاق ڈار اور مفتاح اسماعیل کے خلاف بھی کرپشن ریفرنس کھولنے کی درخواست دائر کی ہےسابق آصف زرداری کے خلاف جعلی اکاؤنٹ کیسز بھی بحال ہوگئے ہیں جبکہ راجہ پرویز اشرف کے خلاف رینٹل پاور کیس بھی کھل گیا نواز شریف، آصف زرداری، یوسف رضا گیلانی کے خلاف توشہ خانہ گاڑیوں کا کیس بھی کھل گیا، اس کے علاوہ مراد علی شاہ، شاہد خاقان عباسی کے خلاف کیسز بھی بحال کر دیے گئے ہیں اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کا داخل دفتر کیا گیا کیس بھی کھل گیا ہے، جب کہ ملک بھر کی احتساب عدالتوں میں کرپشن کیسز دوبارہ کھولنے کیلئے درخواستیں دائر کی جائیں گی۔

سعودی عرب اور اسرائیل قریب تر ہوتے جارہے ہیں، محمد بن سلمان

Leave a reply