پسماندہ اضلاع میں مصنوعی اعضاء سنٹرز بنائے جائیں گے: ڈاکٹر ثانیہ نشتر

احساس پروگرام کی چیئر پرسن ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا ہے کہ بیس پسماندہ اضلاع میں معذورفرادکےلیےمصنوعی اعضاء کے سینٹرزبنائےجائیں گے.

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے پی آئی ڈی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بہت سے اداروں نےرضاکارانہ طورپربجٹ میں کٹوتی کا فیصلہ کیاہے، تمام وزارتوں نے بجٹ میں کٹوتی کا اعلان کیا ہے بجٹ کٹوتی کا فیصلہ فلاحی ریاست کی جانب اہم قدم ہے ،انہوں نے کہا کہ انصاف کارڈ کے ذریعے معذور افراد کو مفت ویل چیئراورسفید چھڑی فراہم کی جائےگی ، معذورافراد کواحساس پروگرام کے تحت کارڈ جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے،معذوری میں نابینا اورسماعت سےمحروم افراد بھی شامل ہیں ،ڈاکٹرثانیہ نے مزید کہا کہ اس تمام عمل کوشفاف بنانےکےلیےعملی اقدامات کیے جا رہے ہیں ،قانون کےتحت سرکاری ملازمتوں معذورافرادکو2فیصدکوٹہ رکھا گیا ہے حکومت نےمعذورافراد کوہرممکن معاونت فراہم کرنےکا فیصلہ کیا ہے،نادرا کےتحت رجسٹرمعذورافرادکوسہولیات فراہم کرنےکافیصلہ کیا گیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.