تحریک انصاف کا مرکز اور پنجاب میں اپوزیشن میں بیٹھنے کا اعلان

0
163

پی ٹی آئی وفد کی اسد قیصر کی سربراہی میں قومی وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب احمد شیر پاؤ سے ملاقات کی ہے ، پی ٹی آئی وفد میں بیرسٹر سیف، شوکت یوسفزئی اور دیگر شامل تھے،قومی وطن پارٹی کے وفد کی قیادت آفتاب احمد خان شیر پاؤ کررہے ہیں . قومی وطن پارٹی کے وفد میں مرکزی سیکرٹری جنرل احمد نواز جدون شامل تھے، وفد میں سینئر نائب چیئرمین حاجی غفران اور نائب چیئرمین ہاشم بابر اور صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شریک ہوئے ، آفتاب شیر پاؤ نے پی ٹی آئی وفد کا خیر مقدم کیا ،
ملاقات میں انتخابات سے متعلق امور پر دوطرفہ بات چیت ہوئی،ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی وفد نے بانی پی ٹی آئی کا پیغام آفتاب احمد خان شیر پاؤ کو پہنچایا ، ذرائع نے بتایا کہ ملک بھر میں عام انتخابات میں جس دھاندلی ہوئی چاہتے ہیں آپ ساتھ دیں، پی ٹی ائی وفد ذرائع نے مزید بتایا آفتاب احمد خان شیر پاؤ نے خیبرپختونخوا میں انتخابات پر اپنے تحفظات کا اظہار کیا ،پی ٹی آئی وفد نے بانی پی ٹی آئی عمران خان کا پیغام آفتاب احمد خان شیر پاؤ کو پہنچایا۔پی ٹی وی وفد نے کہا کہ ملک بھر میں عام انتخابات میں جس دھاندلی ہوئی چاہتے ہیں آپ ساتھ دیں۔جمہوری وطن پارٹی کے چیئرمین آفتاب احمد خان شیر پاؤ نے خیبرپختونخوا میں انتخابات پر اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔
اس سے قبل پی ٹی آئی وفد کا قومی وطن پارٹی کے چئیرمن آفتاب شیر پاؤ سے رابطہ ہوا تھا، جس میں ملاقات کا وقت شام 5 بجے طے پایا تھا۔یاد رہے کہ خیبر پختونخوا میں حکومت سازی کے لیے پی ٹی آئی نے جے یو آئی ف ، جماعت اسلامی اوردیگر جماعتوں سے بھی رابطے کیے ہیں ۔ ملاقات کے بعد بیر سٹر سیف علی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نو منتخب ممبران کے ہمراہ قومی وطن پارٹی کے سربراہ کے پاس آئے ہیں، ملاقات بانی چئیرمین کی ہدایت کے مطابق ہو رہی ہے اس وقت دھاندلی زدہ انتخابات کے نتیجے میں ملک میں بے چینی ہے ووٹر کی امانت میں خیانت ہوئی ہے کچھ لوگ حکومت ملنے پر خوش ہو رہے ہیں یہ پارلیمانی جمہوریت کیلئے بہت بڑا مسئلہ ہے،بیر سٹر سیف نے مزید کہا کہ ہم ملک میں ہم آہنگی اور مفاہمت کی فضا چاہتے ہیں، بانی چئیرمین کی ہدایت پر ہم نے مرکز اور پنجاب میں اپوزیشن میں بیٹھنے کا فیصلہ کیاہے ،انہوں نے کہا کہ ہمیں فارم 45 کے مطابق تنہا حکومت بنانے کی اکثریت مل چکی ہے،ہم قانون اور آئین کے دائرے میں رہتے ہوئے احتجاج کریں گے،اور عدالتوں سے انصاف مانگتے ہیں،بیر سٹر سیف نے بتایا آفتاب شیر پاؤ اور ان کے رہنماوں کو تجویز دی کہ مشترکہ لائحہ عمل اپنایا جائے اسی طرح شیر پاؤ نے کہا سیاسی عدم استحکام سے معاشی عدم استحکام آئے گا،قومی وطن پارٹی نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ دھاندلی کے معاملے پر کمیٹی سے بات کر کے آگاہ کریں گے.

Comments are closed.