20 اپریل تاریخ کے آئینے میں

1712ء جہاں دار شاہ دہلی کے تخت پر بیٹھا۔
0
148
21 feb

20 اپریل تاریخ کے آئینے میں
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1712ء جہاں دار شاہ دہلی کے تخت پر بیٹھا۔

1775ء امریکی جنگ آزادی میں برطانوی فوجوں نے بوسٹن کا محاصرہ کر لیا۔

1792ء فرانس نے آسٹریا کے خلاف جنگ کا اعلان کیا۔

1888ء ہندوستان کے مراد آباد میں ژالہ باری ہونے سے ۲۴۶؍ افراد ہلاک ہوئے۔

1920ء الباما اور مسي سيپي میں طوفان آنے سے ۲۱۹؍ افراد جاں بحق ہوئے۔

1960ء ایئر انڈیا کے بیڑے میں پہلا جیٹ طیارے بوئنگ ۷۰۷ شامل ہوا۔

1963ء ذوالفقار علی بھٹو نے اسلام آباد کے قریب نلور میں پاکستان کے پہلے ایٹمی ری ایکٹر کا سنگ بنیاد رکھا۔

1968ء پیئیر ٹروڈو کی قیادت میں لبرل پارٹی آف کینیڈا نے کینیڈا کے انتخابات جیت لئے۔

1971ء ہندستان نے اپنا پہلا کرکٹ ٹیسٹ میچ جیتا۔

1972ء پاکستان میں عبوری آئین نافذ کر کے مارشل لاء اٹھا لیا گیا۔

1973ء کینیڈا کا اے ایم آئی کے اے ۔۲؍ پہلا تجارتی سیٹلائٹ بنا۔

1978ء۔۔۔ اپریل 1978ء کے مہینے کو فشار خون کے مرض سے جنگ کا عالمی مہینہ قرار دیا گیا تھا ۔اس موقع پر20اپریل 1978ء کو پاکستان کے محکمہ ڈاک نے دو یادگاری ڈاک ٹکٹ جاری کیے جن کی مالیت 20پیسے اور دو روپے تھی ۔ 20پیسے مالیت والے ڈاک ٹکٹ پر اردو میں’’ خون کے اضافی دباؤمیں کمی کیجیے‘‘ اور دو روپے والے ڈاک ٹکٹ پر انگریزی میں ‘Down with High Blood Pressure’کے الفاظ تحریر تھے ۔ان ڈاک ٹکٹوں کو عادل صلاح الدین نے ڈیزائن کیا تھا۔

1981ء۔۔۔ نئی اسلامی صدی کے آغاز پر 25 سے 28 جنوری 1981ء کے دوران مکہ مکرمہ میں عالم اسلام کے سربراہوں کی تاریخی سہ روزہ کانفرنس کا آغاز ہوا۔اس تاریخی اسلامی سربراہ کانفرنس میں تمام اسلامی ممالک کے سربراہ اور اعلیٰ نمائندے شریک ہوئے ۔ اس موقع پر پاکستان کے محکمہ ڈاک نے یادگاری ڈاک ٹکٹوں کی دو سیریز جاری کیں ۔ ان میں سے پہلی سیریز 29 مارچ 1981ء کواور دوسری سیریز 20اپریل 1981ء کو جاری ہوئی ۔ اس دوسری سیریز میں چار یادگاری ڈاک ٹکٹ شامل تھے ۔ ان یادگاری ڈاک ٹکٹوں میں سے دو کی مالیت 40پیسے اور دو کی مالیت 85 پیسے تھی ۔ان ڈاک ٹکٹوں پراسلامی ممالک کے پرچم اور او آئی سی کا لوگو بنا تھا اور انگریزی میں 3rd Islamic Summit Conferenceکے الفاظ تحریر تھے ۔ ان ڈاک ٹکٹوں کا ڈیزائن جناب عادل صلاح الدین نے تیار کیا تھا

1994ء پاکستانی کرکٹ کھلاڑی عامر سہیل اور انضمام الحق نے ایک روزہ انٹرنیشنل میچ میں 263 رنز کی شراکت کاعالمی ریکارڈ قائم کیا ۔

20اپریل 1994ء کو پاکستان کے محکمۂ ڈاک نے حیاتیاتی تنوع کے تحفظ کے لیے یونائیٹڈ نیشنز کانفرنس آن انوائرمنٹ اینڈ ڈیولپمنٹ (UNCTAD) کی جانب سے چلائی جانے والی مہم کے سلسلے میں چار یادگاری ڈاک ٹکٹ جاری کیے جن میں سے ہر ایک کی مالیت چھ روپے تھی۔ ان ڈاک ٹکٹوں پر Wet Land, Mahseer Fish, Brown Bear اور Pattan Jotکی تصاویر بنی تھیں اور PRESERVE BIO-DIVERSITY کے الفاظ تحریر تھے۔ یہ ڈاک ٹکٹ پاکستان سیکورٹی پرنٹنگ کارپوریشن کے آرٹسٹ الیاس جیلانی نے ڈیزائن کیے تھے۔

20اپریل 1995ء کوعالمی یوم ارض کے موقع پر پاکستان کے محکمہ ڈاک نے ایک یادگاری ڈاک ٹکٹ جاری کیا۔ اس ڈاک ٹکٹ کی مالیت چھ روپے تھی اوراسے عبداللہ صدیق نے ڈیزائن کیا تھا۔ اس ڈاک ٹکٹ پردنیا کا نقشہ بنا تھا اور انگریزی میں EARTH DAY کے الفاظ تحریر تھے

1997ء اندر کمار گجرال ہندوستان کے ۱۲ویں وزیر اعظم بنے۔

20اپریل2003ء کو پاکستان کے محکمہ ڈاک نے پاکستان کے عظیم اہل قلم کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے یادگاری ڈاک ٹکٹوں کی سیریز کا ایک ڈاک ٹکٹ پروفیسر اے بی اے حلیم کی یاد میں جاری کیا۔ اس ڈاک ٹکٹ پرپروفیسر اے بی اے حلیم کا ایک خوب صورت پورٹریٹ اور کراچی یونیورسٹی کا لوگو اور یونیورسٹی کی سلور جوبلی تختی کی تصاویر بنی تھیں۔ چار روپیہ مالیت کا یہ ڈاک ٹکٹ مسعود الرحمٰن نے ڈیزائن کیا تھااوراس پر انگریزی میں MEN OF LETTERS اور A.B.A.HALEEM 1897-1975 1st Vice Chancellor (1951-1957) University of Karachi کے الفاظ تحریر تھے۔

2012ء پاکستان کا بوجھا ایئر بوئنگ طیارہ 737 کراچی سے اسلام آباد آتے ہوئے حادثے کا شکار ہوا۔ اس حادثے میں 121 مسافر اور عملے کے چھ ارکان ہلاک ہو گئے تھے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تلاش ، ترتیب و ترسیل : آغا نیاز مگسی

Leave a reply