fbpx

لندن میں نواز شریف پر حملے کی کوشش:شہبازشریف کی طرف سے مذمت

لندن : لندن میں نواز شریف پر حملہ:شہبازشریف کی طرف سے مذمت،اطلاعات کے مطابق مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیراعظم نواز شریف پر لندن میں حملہ، نوجوان نے موبائل فون دے مارا۔

تفصیلات کےمطابق سابق وزیراعظم نواز شریف پر حملہ اس وقت ہوا جب وہ دفتر سے باہر آرہے تھے، اسی دوران ایک نوجوان نے ان کی طرف بڑھنے کی کوشش کی جس پر ان کے ہمراہ گارڈ نے حملہ آور کو پکڑا اور ہاتھا پائی ہوئی، نوجوان نے موبائل نواز شریف کو مارا مگر وہ گارڈ کو لگ گیا۔

 

زخمی گارڈ کو علاج کے لئے ہسپتال منتقل کردیا گیا۔ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے ٹویٹ کرتے گارڈ کی تصویر شیئر کی اور ایک مختصر کیپشن لکھا’انشااللہ ان کو اب نہیں چھوڑنا۔

دوسری طرف شہبازشریف کی طرف سے کہا گیا ہے کہ وہ نوازشریف پر حملے کی مذمت کرتے ہیں اور اس واقعہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہیں

ن لیگ کے رہنما اسحاق ڈار نے بھی اس واقعہ پرافسوس کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقتدار کو آئینی طریقے سے جاتے دیکھ کرعمران_نیازی پاکستان اور بیرون ملک PTI کارکنان کو تشدد اور دہشت گردی پر اکسا رہا ہے
آج قائد PMLN نواز شریف پر حملہ ایک بزدلانہ اور قابل مذمت حرکت ہے۔یہ غنڈہ گردی پاگل پن کی علامت ہے۔کل فاشسٹ_اقتدار کے خاتمے کا دن پاکستان کیلئے یوم نجات ہو گا

شریف فیملی کا کہنا ہے کہ نواز شریف پر پلاننگ کے تحت حملہ کیا گیا نوجوان دفتر کے باہر انتظار کررہا تھا پولیس کو رپورٹ کررہے ہیں سنگین واقعہ ہے

نواز شریف پر حملے کے بعد سیکورٹی مزید سخت کر دی گئی ہے یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ نواز شریف پر حملے کرنے والا مبینہ طور پر پی ٹی آئی کارکن تھا

ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر سامنے آئی ہے جس میں نواز شریف پر حملے کرنے والے نوجوان کو تھپڑ مارا گیا ہے کہا جا رہا ہے کہ اس نوجوان نے نواز شریف پر موبایل دے مارا تھا