آزادی مارچ ، ایک فرد دن میں کتنی روٹیاں کھاتا ہے؟ حیران کن خبر،دل تھام کر پڑھئے

0
49

آزادی مارچ کا ایک فرد دن میں کتنی روٹیاں کھاتا ہے؟ حیران کن خبر،دل تھام کر پڑھئے

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد میں آٹے کی قلت کا سامنا ہے، جے یو آئی کے آزادی مارچ کے شرکاء روزانہ ہزاروں روٹیاں کھا جاتے ہیں جس کی وجہ سے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں آٹے کی قلت پیدا ہو گئی ہے،آزادی مارچ کے شرکاء ایک دن میں ایک بندہ کم از کم دس روٹیاں کھاتا ہے.

مارکیٹ ذرائع کا کہنا ہے کہ آزادی مارچ کے شرکاء کی تعداد زیادہ ہونے کی وجہ سے روٹیاں زیادہ وہاں جا رہی ہیں اسی وجہ سے آٹا بھی مہنگا ہو گیا ہے،اگر آزادی مارچ والے چند دن اور اسلام آباد میں رہے تو وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں آٹے کی شدید قلت پیدا ہو سکتی ہے.

آزادی مارچ کی وجہ سے اسلام آباد میں دودھ کی بھی قلت کا سامنا ہے، آزادی مارچ کے شرکاء چائے بھی بہت زیادہ پیتے ہیں ، جڑواں شہروں کی دکانوں سے دودھ کے ڈبے شرکاء نے خرید لئے ہیں، چائے کے ساتھ ساتھ قہوہ اور کھجوروں کا استعمال بھی بہت زیادہ ہے.

آزادی مارچ کے ڈی چوک جانے پر اعتراض کیوں؟ مولانا فضل الرحمان رو پڑے

ہجوم آگے بڑھا توتمہارے کنٹینرزکوماچس کی ڈبیا کیطرح اٹھا کرپھینک دیگا،مولانا کی دھمکی

واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں آزادی مارچ اسلام آباد میں موجود ہے، آزادی مارچ کے شرکاء نےا یچ نائن میں ڈیرے ڈال لگے رکھے ہیں، حکومت اور اپوزیشن کی مذاکراتی کمیٹیوں میں آج بھی مزاکرات ہوئے تا ہم ڈیڈ لاک برقرار ہے، وزیراعظم عمران خان نے استعفی کے علاوہ تمام آئینی مطالبات ماننے کی منظوری دی ہے لیکن مولانا فضل الرحمان وزیراعظم کے استعفیٰ پر بضد ہیں.

پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن نے‌آزادی مارچ کا ساتھ چھوڑ دیا ہے، مولانا کے کارکنان اکیلے پانچ روز سے اسلام آباد میں بیٹھے ہیں.

آزادی مارچ کے شرکا 5 روز قبل اسلام آباد میں مختص کیے گئے گراؤنڈ میں پہنچے تھے جہاں وہ اپنی قیادت کی ہدایت پر اب تک پرامن طور پر موجود ہیں۔ تاہم حکومت کی جانب سے آزادی مارچ کے اسلام آباد میں داخل ہوتے ہی میٹرو بس سروس کو مینٹیننس کے نام پر ایک روز کے لیے بند کرنے کا اعلان کیا تھا۔ ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقات نے آزادی مارچ کے اسلام آباد داخل ہونے کے باوجود میٹرو بس سروس بند نہ کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن پھر بھی میٹرو بس سروس بند کر دی گئی تھی۔

Leave a reply