باغی ٹی وی کی خبر پر ایکشن، پولیس نے بچی کے ساتھ زیادتی کرنے والا مجرم گرفتار کر لیا

تفصیلات کے مطابق سرگودہا تھانہ کوٹ مومن کی حدود میں واقع موضع للیانی میں دو دن پہلے انتہائی درد ناک واقعہ پیش آیا، محنت کش سیف اللہ کی 8 سالہ بچی سعدیہ سیف تیسری جماعت کی طالبہ سکول سے واپس آ رہی تھی کہ علاقہ کے بااثر زمیندار بشیر لک کے بیٹے مبشرلک نے اسے زبردستی پکڑ لیا اور کھیتوں میں لے گیا اور زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا مقتولہ سعدیہ کا والد قریبی کھیتوں میں کام کر رہا تھا شور سن کر موقع کی طرف دوڑا اس سے پہلے کہ ان کے پاس پہنچتا ملزم بچی کو گلا گھونٹ کر مار چکا تھا

حوا کی ایک اور 8 سالہ بیٹی ظالم کی درندگی کا شکار ہو گئی

باغی ٹی وی کی خبر کے بعد وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او کو فوری ملزم کو گرفتار کرنے کی ہدایت کی جس پر ایکشن لیتے ہوئے تھانہ کوٹ مومن کی پولیس نے ملزم کی گرفتاری کیلیے چھاپہ مارنے شروع کر دیے ڈی پی او نے ڈی ایس پی کوٹ مومن ملک غلام عباس کی سربراہی میں خصوصی ٹیم تشکیل دی جس نے فوری کاروائی کرتے ہوئے 24 گھنٹوں کے اندر ملزم مبشر لک ولد بشیر لک کو گرفتار کر لیا بچی کے والد نے باغی ٹی وی کو بتایا کہ پولیس ان کے ساتھ مکلمل تعاون کر رہی ہے بچی کی لاش وصول کرنے کے عمل سے لے کر تدفین تک پولیس ان کے ساتھ موجود رہی اور بچی کی قل خوانی میں بھی شرکت کی جس پر وہ پولیس کے ممنون ہیں

تھانہ کوٹ مومن پولیس نے قتل کی دفعات کے تخت ملزم سے تفتیش شروع کر دی ہے ڈی ایس پی کوٹ مومن پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کو جلد چالان کر کے عدالت میں پیش کیا جائے گا تاکہ وہ کیفر کردار کو پہنچ سکے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.