بغداد پھر خون میں نہا گیا مظاہرین کی ہلاکتیں اور بڑھ گئیں

0
58

بغداد پھر خون میں نہا گیا .مزید مظاہرین کی ہلاکتیں

بغداد میں جاری مظاہرے مزید خون آشام ہو گئے ہیں وہاں مظاہرین کو کنٹرول کرنے والی فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ایک بار پھر فائرنگ کر دی جس وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد اور بڑھ گئی.
عراقی ذمے داران کے مطابق خون ریز احتجاجی مظاہروں کے تیسرے روز میں داخل ہونے کے بعد اب تک دارالحکومت بغداد اور ملک کے کئی جنوبی شہروں میں مجموعی طور پر ہلاک ہونے والوں کی تعداد 15 ہو چکی ہے۔ عراق میں انسانی حقوق کے کمیشن کے مطابق ہلاک شدگان میں ایک پولیس اہل کار بھی شامل ہے

واضح رہے کہ عراق کے مختلف شہروں میں گذشتہ دنوں ہونے والے احتجاجی مظاہروں کے بعد امن وامان کی صورت حال اتنی خراب ہوئی کہ اس کو قابو میں رکھنے کے لیے ناصریہ شہر میں‌فوج بلانا پڑی ۔ اطلاعات کے مطابق پرتشدد مظاہروں کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور 200 کے قریب زخمی ہوئے ہیں۔ زخمیوں میں 40 سیکیورٹی اہلکار شامل ہیں۔خیال رہے کہ بغداد اور دوسرے عراقے شہریوں میں ہونے والے مظاہروں کے دوران شہریوں نے بدعنوانی کے خلاف اور شہریوں کو بنیادی سہولیات کی فراہمی کے حق میں نعرے لگائے.اور اپنے حقوق کے لیے اتنے پر تشدد مظاہر ےکیے.
تازہ ترین پیشرفت کے مطابق الحکمہ تنظیم کے سربراہ عمار الحکیم نے بغداد میں مظاہروں کے بعد پارلیمنٹ کا ہنگامی اجلاس طلب کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔

عراق: مقتدی الصدر نے مظاہرین پر تشدد کی وجہ سے اہم بات کہہ دی

Leave a reply