ورلڈ ہیڈر ایڈ

چیئرمین نیب کے استعفیٰ کے مطالبے پر مسلم لیگ ن میں اختلافات

چیئرمین نیب کے استعفیٰ کے مطالبے پر مسلم لیگ ن میں اختلافات پید ا ہو گئے. مسلم لیگ نے کے رہنما ملک احمدخان نے چیئرمین نیب کے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا تو ن لیگ کی ترجمان میدان میں آ گئیں، مریم اورنگزیب نے کہا کہ ملک محمد احمد خان صاحب نے جو کہا، وہ ان کی ذاتی رائے ہے ،ملک محمد احمد خان کی رائے پارٹی موقف نہیں .

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما ملک احمد خان نے چیئرمین نیب کے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ چیئرمین نیب اب احتساب کی پوزیشن میں نہیں رہے۔ نیب تحریک انصاف کا پلاننگ یونٹ ہے، نیب کی وجہ سے لوگوں نے خودکشیاں شروع کر دی ہیں، چیئرمین نیب نے کہا وزرا کیخلاف اس لیے کارروائی نہیں کر رہا کہ حکومت نہ گر جائے، نیب حکومت کا ایک ٹول ہے، نیب قانون کا غلط استعمال کر رہا ہے، چیئرمین نیب نے ملکی نظام کا تماشہ لگا دیا ہے، یقین ہے چیئرمین نیب ملکی مفاد میں استعفیٰ نہیں دینگے، قانون کو اس ملک میں کون بیان کرے گا؟۔

چیئرمین نیب کے خلاف خبر نشر کرنے پر پیمرا نے نیوز ون چینل کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا.      چیئرمین نیب کی کردار کشی کرنیوالے سائبر کرائم کے ماہر، انڈیا اور افغانستان میں رابطے، حیران کن انکشافات.      چیئرمین نیب ویڈیو سیکنڈل، مسلم لیگ ن تقسیم ہو گئی، پہلے ذاتی معاملہ کہا پھر یوٹرن لے لیا.

 

ملک احمد خان کی جانب سے چیئرمین نیب کے استعفیٰ کے مطالبے کے بعد مریم اورنگزیب میدان میں آ گئیں اور انہوں نے کہا کہ استعفیٰ کا مطالبہ ملک احمد خان کی ذاتی رائے ہے ، پارٹی کی نہیں.صدرمسلم لیگ ن شہباز شریف،سینیرنائب صدرشاہدخاقان چیرمین نیب پرواضح پارٹی موقف بیان کرچکے ہیں ،مریم اورنگزیب نے مزید کہا کہ پارلیمانی کمیٹی بنائی جائےجو چیرمین نیب کےسارے معاملےکی تحقیق کرے .

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.