fbpx

بھارتی مسلمانوں پرقیامت طاری:ہندو انتہا پسندوں کے مسلمانوں کی املاک اور مساجد پرحملے

بھارت کی ریاست تریپورہ میں مسلمانوں پر تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوگیا ہے ، ایک ہفتے کے دوران ہندو انتہا پسندوں نےکئی مساجد کی بے حرمتی کی اور مسلمانوں کی املاک جلادیں۔

بنگلا دیش کی سرحد سے متصل بھارتی ریاست تریپورہ گذشتہ ایک ہفتے سے تشدد کی لپیٹ میں ہے جہاں بسنے والے مسلمانوں پر حملے کیے جارہے ہیں اور ان کے کاروبار سمیت مساجد پر بھی حملےکیے گئے ہیں۔

 

 

برطانوی میڈیا کے مطابق ہندو انتہا پسندوں کی جانب سےکم ازکم ایک درجن مساجد میں توڑ پھوڑ کی گئی ہے یا انھیں جلایا گیا اور متعدد مقامات پر مسلمانوں کے گھروں اور کاروبار پر حملےکیے گئے۔

 

 

 

سوشل میڈیا پر مسجدوں اور مسلمانوں کے گھروں میں توڑ پھوڑ کی تصاویر شیئر کی جا رہی ہیں۔

مسلمانوں کے خلاف پرتشدد واقعات پر اپوزیشن رہنما راہول گاندھی نے مودی سرکار پر تنقید کرتے ہوئےکہا ہےکہ ہندو مذہب کے نام پر نفرت اور تشدد کرنے والے ہندو نہیں، منافق ہیں، حکومت کب تک اندھی اور بہری ہونے کا ڈرامہ کرتی رہےگی۔

دوسری جانب تریپورہ ہائی کورٹ نےمسلم اقلیت پر تشدد کے واقعات کا نوٹس لیتے ہوئے ریاستی حکومت سے جواب طلب کرلیا ہے۔