fbpx

الیکشن کمیشن کیسے عدالتی اختیارات استعمال کرتا ہے؟ عدالت

الیکشن کمیشن کیسے عدالتی اختیارات استعمال کرتا ہے؟ عدالت

الیکشن کمیشن کے سیکشن دس کے تحت توہین عدالت کو چیلنج کرنے سے متعلق کیس پر سماعت ہوئی

عدالت نے الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 18 اکتوبر کے لیے جواب طلب کر لیا عدالت نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اور اٹارنی جنرل کو 27 اے کا نوٹس جاری کرتے ہوئے معاونت کا حکم دے دیا عدالت نے اسٹنٹ اٹارنی جنرل سے استفسار کیا کہ الیکشن کمیشن یہ اختیارات کیسے استعمال کر سکتا ہے،اسکا کوئی قانون بننا چاہیے،الیکشن کمیشن کیسے عدالتی اختیارات استعمال کرتا ہے،الیکشن کمیشن کے فیصلے تو ہائیکورٹ میں چیلنج کیے جاتے ہیں

درخواست گزار میاں شبیر اسماعیل کی جانب سے ایڈووکیٹ اظہر صدیق نے دلائل پیش کیے ،لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس عابد عزیز شیخ نے کیس پر سماعت کی ،لاہور ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں الیکشن کمیشن اور پنجاب حکومت کو فریق بنایا گیا ،درخواست گزار کی جانب سے کہا گیا کہ درخواست میں سیکشن دس کے تحت الیکشن ایکٹ کو چیلنج کیا گیا ہے،الیکشن کمیشن نہ تو عدالت اور ہے اور نہ ہی عدالتی اختیارات کا استعمال کر سکتی ہے،توہین عدالت کا اختیار اسے دینا آئین پاکستان 1973 کی خلاف ورزی ہے،توہین عدالت کا اختیار صرف عدالتوں کے پاس ہے،الیکشن کمیشن کو یہ اختیار نہیں ہے کہ وہ توہین عدالت کی کاروائی کر سکے الیکشن کمیشن ایک انتظامی اداہ ہے،اگر الیکشن کمیشن کو توہین عدالت کی اجازت دینی ہوتی تو آئین پاکستان میں اسے فراہم کی جاتی،عدالت سیکشن دس کے تحت الیکشن کمیشن کیخلاف حکم امتناعی جاری کرے،

شوکت ترین ، تیمور جھگڑا ،محسن لغاری کی پاکستان کے خلاف سازش بے نقاب،آڈیو سامنے آ گئی

فوج اور قوم کے درمیان خلیج پیدا کرنا ملک دشمن قوتوں کا ایجنڈا ہے،پرویز الہیٰ

سپریم کورٹ نے دیا پی ٹی آئی کو جھٹکا،فواد چودھری کو بولنے سے بھی روک دیا

بیانیہ پٹ گیا، عمران خان کا پول کھلنے والا ہے ،آئی ایم ایف ڈیل، انجام کیا ہو گا؟

سینئر قیادت پرہتک آمیز،انتہائی غیرضروری بیان پرپاک آرمی میں شدید غم وغصہ ہے،ڈی جی آئی ایس پی آر