ارطغرل غازی کی پہلی قسط پی ٹی وی پر ریلیز

پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) پر گذشتہ رات یکم رماضان المبارک سے ڈرامہ ارطغرل غازی کی پہلی قسط آن ائیر کر دی گئی

باغی ٹی وی : حکومت ِ پاکستان کی جانب سے ترکی کے ڈرامہ سیریل ارطغرل کو یکم رمضان سے سرکاری ٹی وی پر چلانے کا اعلان کیا گیا تھا جس کی پہلی قسط گذشتہ رات جاری کی گئی

اسلامی تاریخ پر مبنی اور خلافت عثمانیہ کی مکمل کہانی لیے ہوئے ترکی کے بنائے گئے ڈرامے کو دنیا بھر میں بہت شہرت ملی ہے، نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم ممالک میں بھی یہ ڈرامہ مختلف زبانوں میں ترجمے کے بعد دیکھا گیا ہے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان بھی اپنی متعدد تقاریر میں اس ڈرامے کا ذکر کرچکے ہیں جس کے بعد حکومت نے اس ڈرامے کو یکم رمضان المبارک سے سرکاری ٹی وی پر نشر کرنے کا اعلان کیا تھا

150 قسطوں پر مشتمل اس ڈرامے کو ترک حکومت نے اس لیے بنوایا کہ عوام کو خلافت عثمانیہ کی پوری کہانی معلوم ہوسکے، اس سیریل میں عورتوں نے مختلف کردار بھی ادا کیے ہیں اور ڈرامے میں عشق و محبت کی کہانیاں بھی ساتھ ساتھ چلتی ہیں

گذشتہ رات پاکستان میں بھی سرکاری ٹی وی پر اس ڈرامے کی پہلی قسط جاری کی گئی جس میں سن 1225 کی دہائی میں قائی عباسی قبیلے کی کہانی کا آغاز دکھایا گیا اس قسط میں عیسائیوں کو مسلمانوں کو الگ کرنے اور ان کے درمیان پھوٹ ڈالنے کی سازش کو دکھا یا گیا اور عیاسئیوں کے ساتھ مسلمان قائی قبیلے کے چند نوجوانون کی لڑائی کو دکھایا گیا جو جنگل میں شکار کے لئے جاتے ہیں لیکن وہاں پر عیسائیوں کی قید میں مسلمان خاندان کی پکار پر ان کو ان کی قید سے آزاد کرتے ہیں اور زخمی قیدی کو لے کر اپنے ساتھ اپنے قبیلے میں لے جاتے ہیں

واضح رہے کہ یہ ڈرامہ پاکستان میں شروع ہونے سے پہلے اس متنازع بھی رہا کچھ لوگ اس ڈرامے کے حق میں تھے کہ یہ مسلمانوں میں جہاد کے جذبے کو بیدار کریگا جبکہ دوسری طرف کچھ لوگوں کا خیا ل تھا کہ ڈرامے میں خلافت عثمانیہ کے بانی عثمان کے والد ارطغرل اور ان کے قبیلے کے افراد کے حالات کو پیش کیا گیا ہے، اس کے تمام واقعات مستند بھی نہیں ہیں اور اس میں جھوٹ سچ کی آمیزش ہے، ڈرامہ اس انداز میں بنایا گیا ہے کہ ایک بار دیکھنے پر ہی ناظرین کو اپنے سحر میں قید کرلیتا ہے

علاوہ ازیں جامعہ بنوری کے علامہ محمد یوسف بنوری کی جانب سے اس سوال پر فتوی جاری کیا گیا جس میں کہا گیا کہ ” کسی بھی جائز مقصد کو حاصل کرنے کے لیے ناجائز طریقہ اپنانا درست نہیں، خلافتِ عثمانیہ کے تاریخی دور کی روئیداد تاریخ کی کتابوں کے مطالعہ اور اس سے متعلق لٹریچر عام کرکے ہوسکتی ہے،اس کے لیے فلم، ڈرامہ بنانا اور دیکھنا جائز نہیں ہے

ترک سیریز ارطغرل غازی یکم رمضان سے پی ٹی وی پر نشر کی جائے گی

ترک ڈرامہ’ارطغرل’دیکھنا جائزنہیں ہے ، جامعۃ‌العلوم الاسلامیہ بنوری ٹاون، فتوے سے نئی بحث چھڑگئی سچا،کون جھوٹا کون ؟

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.