دارالحکومت میں دھماکے ہی دھماکے: 23 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی

0
21

کابل:دارالحکومت میں دھماکے ہی دھماکے: 23 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی،اطلاعات کے مطابق افغانستان کے دارالحکومت کابل میںپے در پے ہونے والے 3 بم دھماکوں میں 23 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے ہیں بم دھماکے ایسے وقت میں ہوئے کہ جب مغربی ممالک نے حال ہی میں طالبان سے تشدد کی لہر روکنے کا مطالبہ کیا تھا تاہم طالبان ان حملوں کی ذمہ داری سے انکار کرتے ہیں.

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق ایسے میں جب واشنگٹن اور نیٹو افغانستان سے اپنی فوجیں واپس بلانے کے منصوبے پر نظرثانی کررہے ہیں کابل میں ایک دھماکے میں ایک ایس یو وی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں غیر سرکاری فلاحی تنظیم جماعت اصلاح کے سربراہ سمیت 11افراد مارے گئے.

پولیس کے مطابق شہر میں ہونے والے دیگر 2 بم دھماکوں میں مزید 12افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوئے ان دھماکوں میں انسداد منشیات فورس اور ایک شہری کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا تھا پولیس حکام نے بتایا کہ تینوں دھماکے مقناطیسی ڈیوائس کے ذریعے کیے گئے جنہیں اسٹکی بم کہا جاتا ہے.

دوسری جانب طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے غیرملکی نشریاتی ادارے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا کابل میں ہوئے دھماکوں سے کوئی لینا دینا نہیں ہے علاوہ ازیں مشرقی شہر جلال آباد میں بھی ایک گاڑی کو حملے میں نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں ایک فوجی جوان ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے جبکہ صوبہ پروان میں بھی ایک سینئر سیکیورٹی عہدیدار کو نشانہ بنایا گیا.

Leave a reply