گوگل کا غیر متحرک اکاؤنٹس ڈیلیٹ کرنے کا فیصلہ

0
22

گوگل کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ ایسے اکاؤنٹس کو ڈیلیٹ کر دیا جائے گا جو گزشتہ 2 سال سے غیر متحرک ہیں۔

باغی ٹی وی : کمپنی نے ایک بلاگ پوسٹ میں بتایا کہ اس پالیسی کا اطلاق دسمبر 2023 میں ہوگا اور اس میں جی میل، ڈاکس، ڈرائیو، میٹ، کیلنڈر، یوٹیوب اور فوٹوز کے لیے گوگل اکاؤنٹس کو شامل کیا جائے گا۔

اینڈرائیڈ فون جن میں واٹس ایپ استعمال کرنا ممکن نہیں ہوگا

کمپنی کے مطابق لوگ چاہتے ہیں کہ وہ مصنوعات اور خدمات جو وہ آن لائن استعمال کرتے ہیں محفوظ ہوں۔ یہی وجہ ہے کہ ہم نے اپنے صارفین کو حفاظتی خطرات سے بچانے کے لیے ٹیکنالوجی اور ٹولز میں سرمایہ کاری کی ہے، جیسے اسپام، فشنگ اسکیمز اور اکاؤنٹ ہائی جیکنگ میں-

کمپنی کے مطابق یہاں تک کہ ان تحفظات کے باوجود، اگر کوئی اکاؤنٹ طویل عرصے تک استعمال نہیں کیا گیا ہے، تو اس سے سمجھوتہ کیے جانے کا امکان زیادہ ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ بھولے یا غیر حاضر اکاؤنٹس اکثر پرانے یا دوبارہ استعمال کیے گئے پاس ورڈز پر انحصار کرتے ہیں جن سے سمجھوتہ کیا گیا ہو-

میٹا کی واٹس ایپ میں گوگل ڈرائیو کی متبادل ٹرانسفر کی آزمائش

کمپنی کے مطابق اس طرح کے غیر متحرک اکاؤنٹس ہیک ہونے کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے،اسی طرح غیر متحرک اکاؤنٹس کے لیے 2 فیکٹر تصدیقی سیٹنگ کے استعمال ہونے کا امکان بھی بہت کم ہوتا ہے ان اکاؤنٹس کی سکیورٹی کمزور ہوتی ہے اور ایک بار وہ ہیک ہو جائیں تو انہیں غیر قانونی مقاصد یا اسپام مواد پھیلانے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

کمپنی کے مطابق سب سے پہلے ایسے گوگل اکاؤنٹس کو ڈیلیٹ کیا جائے گا جن کو بنانے کے بعد کبھی استعمال نہیں کیا گیا کسی اکاؤنٹ کو ڈیلیٹ کرنے سے قبل متعدد نوٹیفکیشنز بھی ارسال کیے جائیں گے یہ نوٹیفکیشنز صارف کے مرکزی ای میل ایڈریس کے ساتھ ساتھ بیک اپ ای میل ایڈریس پر بھیجے جائیں گےاس پالیسی کا اطلاق ذاتی گوگل اکاؤنٹس پر ہوگا جبکہ اداروں یعنی اسکولوں یا کاروبار جیسی تنظیموں سے منسلک اکاؤنٹس متاثر نہیں ہوں گے۔

مصنوعی ذہانت ٹیکنالوجی اندازوں سے کہیں زیادہ خطرناک ہے،اے آئی کے گاڈ فادر نے خبردار …

Leave a reply