حوثی باغیوں نے 23 ہزار بچوں کو جنگ کے لیے بھرتی کر لیا، رپورٹ

0
32

حوثی باغیوں نے 23 ہزار بچوں کو جنگ کے لیے بھرتی کر لیا، رپورٹ جمع کرا دی گئی
تفصیلات کے مطابق : حوثی باغیوں کے ایک اقدام بارے عرب یوروپیین فورم برائے انسانی حقوق نے سوئس دارالحکومت جنیوا میں اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے سامنے ایک رپورٹ پیش کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے 23،000 یمنی بچوں کو جنگ کے لیے بھرتی کیا۔ یہ رپورٹ انسانی حقوق کونسل کے 42 ویں سالانہ اجلاس کے موقعے پر پیش کی گئی۔

حوثی باغیوں نے یمن کے سکولوں میں بچوں سے اپنے ساتھ لڑنے کا حلف لینا شروع کر دیا.


اس سے پہلے حوثی ملک کے شمالی صعدہ صوبے میں 2014 سے اسکولوں میں طلبہ صبح کی اسمبلی کے اختتام پر قومی ترانے کے بجائے حوثیوں کے سربراہ "عبدالملک بدر الدين الحوثی” کی وفاداری کی عبارتوں پر مشتمل حلف دہراتے ہیں۔صعدہ حوثیوں کا گڑھ تصور کیا جاتا ہےی.

اس کے علاوہ یہ انکشاف بھی کیا گیا ہےکہ حوثی ملیشیا نے پرائمری اور اعلی ثانوی مراحل کے نصاب میں "2014 کے ایڈیشن” میں 234 ترامیم کیں۔ یہ تمام تر ترامیم نصاب سے متعلق کمیٹی سے رجوع کیے بغیر اپنی مرضی سےکیا گیا ہے.

Leave a reply