عمران خان نے اپنی ان باتوں سے انکار کردیا جنکی بنیاد پر ریاستی تشکیل کا وعدہ کیا تھا

0
51

سابق وزیر اعظم عمران خان نے اپنی ان باتوں تک سے انکار کردیا ہے جنکی بنیاد پر ریاستی تشکیل کا وعدہ کیا تھا.

عمران خان ایک سیمنار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب میں حکومت میں آیا تو تب میں نے ریاست مدینہ کی بات کی جبکہ اس سے پہلے میں نے ایسی کوئی بات نہیں ہے، اور جب میں وزیر اعظم پاکستان بن گیا تب میں نے محسوس کیا کہ یہاں پاکستان میں ریاست مدینہ کے اصولوں کو اپنانا چاہئے اور میں نے اس سے پہلے یہ بات اس لیے نہیں کی تھی کہ یہ کوئی نہ سمجھے کہ میں ووٹ مانگ رہا ہوں اور لوگ میری نیت پر شک نہ کریں جیسے کہ مولانا فضل الرحمان اسلام کو بیچتا ہے.


جبکہ وہ ویڈیو کلپ موجود ہیں میں الیکشن کمپین کے دوران عمران خان کئی بار مدینہ کی ریاست کا کہہ چکے 2018 کے ایک ویڈیو کلپ میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کہہ رہے کہ ہمارے پیارے نبی ﷺ نے پہلی فلاح ریاست بنائی تھی لہذا ہم نے بھی اس پاکستان کو مدینہ پہلی فلاحی ریاست بنانا ہے. ایک اور ویڈیو کلپ جو غالبا 2015 کا ہے کہ میں سابق وزیر اعظم عمران کہہ رہے کہ جو میں نیا پاکستان دیکھ رہا ہوں وہ وہ پاکستان ہوگا جس کو بننا تھا اسلامی فلاحی ریاست، اسی بیان میں انہوں نے الزام عائد کیا تھا یہ حکمران اپنے لیئے ایک قانون اور دوسروں کیلئے الگ قانون بناتے ہیں.
مزید یہ بھی پڑھیں: عمران خان کی بھی آڈیو لیک ہو گئی،امریکی سائفر کا سارا ڈرامہ بے نقاب
شہباز شریف کی مبینہ طور پر مریم کے داماد کے لیے سرکاری افسروں پر دباو کی مبینہ آڈیو لیک
عمران کی ویڈیوز دیکھی ہیں، اس قابل نہیں دیکھا یا دکھایا جائے: رانا ثنا کا دعویٰ
بات صرف یہی نہیں رکی عمران خان نے 2018 ہی میں ایک جگہ خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہمارا جو چیلنج ہے وہ یہ کہ ہم اس کو کیسے وہ پاکستان بنائیں ہمارے بانی پاکستان قائد اعظم کی تمنا تھی اور ان کی تمنا یہ تھی کہ وہ اس ملک کو اسلامی فلاحی ریاست بنانا چاہتے تھے. اسی بیان میں عمران خان نے یہ بھی وضاحت کی کہ اسلامی فلاحی ریاست کا ماڈل مدینہ کی ریاست ہے.

Leave a reply