fbpx

بھارتی طلباء کے پاکستانی پرچم لہرانے پر انڈیا میں کھلبلی، بی جے پی سڑکوں پر نکل آئی

بھارتی ریاست کیرالہ کے ایک کالج میں پاکستانی جھنڈا لہرا دیا گیا ہے جس پر بھارتی فورسز نے 30 سے زائد طلباء کو گرفتار کر لیا گیا ہے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ہندوستانی ریاست کیرالہ میں واقعہ سلما آرٹس اینڈ سائنس کالج میں الیکشن مہم کے دوران پاکستان کا جھنڈا لہرایا گیا جس کے بعد 25 سے زائد طلباء کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے جبکہ ایک طالبعلم کو گرفتار کر لیا ہے، بھارت کی حکمران جماعت بی جے پی کے اہلکاروں تک یہ بات پہنچی تو انہوں نے اس کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی جبکہ بھارتی میڈیا بھی پاکستانی جھنڈا لہرائے جانے پر چیخ اُٹھا جن طلبا کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا انہوں نے اسے ڈیزائننگ اور پرنٹنگ کی غلطی قرار دیا لیکن ان کی اس دلیل کو ماننے سے انکار کر دیا گیا،

مقبوضہ کشمیر میں تو پاکستان زندہ باد کے نعرے اور پاکستان کا جھنڈا لہراتے ہوئے نظر آتا ہی ہے لیکن گذشتہ برس نئی دہلی میں منعقد ہونے والی ایک تقریب میں ”پاکستان زندہ باد” کے نعرے لگ گئے تھے جس نے بھارت کی نیندیں اُڑا دی تھیں، قبل ازیں وزیراعظم عمران خان کی تقریب حلف برداری میں شرکت کے لیے آنے پر بھارتی حکومت اور بھارتی میڈیا نے نوجوت سنگھ سدھو کے خلاف ہرزہ سرائی شروع کی اور انہیں غدار کہنا شروع کیا تھا، سدھو کے خلاف ہرزہ سرائی اورانہیں غدار کہنے پرسکھ برادری نوجوت سنگھ سدھو کے حق میں سراپا احتجاج ہوئی اور احتجاج کے دوران بھارت میں ”پاکستان زندہ باد” اور ”خالصتان زندہ باد” کے نعرے لگائے گئے تھے،