عراق نے بھی ایران سے اپنا سفیر واپس بلالیا

ایران کا دعویٰ ہے کہ اس حملے کا بنیادی مقصد اسرائیلی جاسوسوں کی طرف سے حملوں کی منصوبہ بندی کو ناکام بنانا تھا
0
122
iran

بغداد: عراق نے بھی تہران سے اپنا سفیر واپس بلالیا ہے۔

باغی ٹی وی: شمالی عراق کے نیم خود مختار علاقے کردستان میں بعض مقامات پر میزائل حملے کے بعد عراقی حکومت نے بھی ایران سے سفیر کو واپس بلالیا ،عراقی حکومت نے تہران سے سفیر کو واپس بلانے کے ساتھ ساتھ بغداد میں ایران کے ناظم الامور کو بھی طلب کرکے احتجاج کیا ہےایران کا دعویٰ ہے کہ اس حملے کا بنیادی مقصد اسرائیلی جاسوسوں کی طرف سے حملوں کی منصوبہ بندی کو ناکام بنانا تھا۔

ایران کے پاسدارانِ انقلاب نے بتایا ہے کہ انہوں نے منگل کو شمالی عراق کے نیم خود مختار علاقے کردستان میں اسرائیلی جاسوسوں کے ایک ٹھکانے کو نشانہ بنایا ساتھ ہی ساتھ انہوں نے شام میں داعش کے ٹھکانوں پر بھی حملہ کیا۔

سیستان بلوچستان میں سپاه پاسداران انقلاب کا کرنل مسلح افراد کی فائرنگ سے ہلاک

عراق کے وزیر اعظم محمد شیاع السودانی نے کہا کہ شمالی عراق میں ایرانی حملہ عراق کے خلاف واضح جارحیت ہے جس سے صورتِ حال خطرناک شکل اختیارکر رہی ہے اس سے تہران اور بغداد کی دوستی اور پارٹنر شپ بری طرح متاثر ہوئی ہےایران کے خلاف تمام قانونی اور سفارتی اقدامات کا حق محفوظ رکھتے ہیں ۔

ایران نے3ہمسایہ ممالک کی خودمختارسرحدوں کی خلاف ورزی کی،امریکا

کردستان کے دارالحکومت اربل میں امریکی قونصلیٹ کے نزدیک رہائشی علاقے پر حملے کو عراقی کردستان کے وزیر اعظم مسرور برزانی نے کرد عوام کے خلاف جرم قرار دیا تھا۔ اس حملے میں چار شہری جاں بحق اور 6 زخمی ہوئے تھے، جاں بحق ہونے والوں میں ایک بڑا کرد بزنس مین پیشرو درزائی اور اس کے خاندان کے افراد شامل تھے، ایک راکٹ ان کے گھر میں گرا۔

عراق کے نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر قاسم العراجی کہتے ہیں کہ اس مکان کے اسرائیل کے لیے جاسوسی کا مرکز ہونے کا ایرانی دعویٰ بے بنیاد ہے، ایران نے اسے اسرائیل کی مرکزی خفیہ ایجنسی موساد کا گڑھ قرار دیا تھا۔

برطانیہ میں خالصتان کے حامیوں کی جان کو خطرات،برطانوی پولیس نے وارننگ جاری …

Leave a reply