fbpx

اسحاق ڈار کی درخواست پرسماعت کل سپریم کورت میں ہو گی

سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو اشتہاری قرار دینے اور ان کے اثاثے منجمد قرار دیے جانے کے خلاف درخواست سپریم کورٹ میں سماعت کے لیے مقرر کردی گئی۔

اسحاق ڈار کے حوالے سے دائر درخواست کی سماعت جسٹس اعجاز الاحسن کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا 2 رکنی بینچ کل کرے گا۔ سپریم کورٹ کے اس بینچ کا حصہ جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی بھی ہوں گے۔ ن لیگی سینیٹر نے احتساب عدالت کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کر رکھا ہے۔

اس سے قبل مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے مفرو ر قرار دیئے جانے کے فیصلے کیخلاف سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا.

سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے عدالت سے استدعا کی ہے کہ مفرور قرار دینے کا فیصلہ کالعدم قرار دیا جائے،اسحاق ڈار نے استدعا میں مذید کہا کہ وکیل کے ذریعے نیب کورٹ میں اپنا کیس چلانے کی اجازت دی جائے، اسحاق ڈار کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں کہا گیا کہ مئی2022میں مجھے پاسپورٹ دیا گیا.سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے درخواست میں عدالت سے استدعا کی کہ 25اگست سے شروع ہونے والے عدالتی ہفتے میں کیس سماعت کیلئے مقرر کیا جائے.

یاد رہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار علاج کی غرض سے بیرون ملک (لندن) گئے تھے اور وطن واپس نہیں آئے جس کے بعد عدالت نے انہیں مقدمہ میں مفرور قرار دے دیا تھا.

سپریم کورٹ میں کل سماعت ہونے والے اہم مقدمات میں منظور حسین وسان بنام رجسٹرار اپیلٹ ٹریبونل کورٹ کیس کی سماعت جو صوبائی اسمبلی کی انتخابی عذرداری سے متعلق ہے
کورٹ نمبر ایک چیف جسٹس عمر عطاء بندیال تین رکنی بینچ سیریل نمبر 2 میں کل ہو گی،
انکم سپورٹ لیوی ایکٹ 2013 کے خلاف دائر درخواستوں پر سماعت
کورٹ نمبر ایک میں ہو گی، چیف جسٹس عمر عطاء بندیال تین رکنی بینچ سیریل نمبر 9 میں سماعت کریں گے..جبکہ رحیم یارخان ہندو مندر حملہ از خود نوٹس کیس کی سماعت
کل کورٹ نمبر تین میں ہو گی جسٹس اعجاز الاحسن دو رکنی بینچ سیریل نمبر 4 سماعت کریں گے.

نیب بنام حمزہ شہباز شریف وغیرہ کیس کی سماعت جو حمزہ شہباز شریف کو گرفتاری سے پہلے آگاہ کرنے کےلاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف نیب کی دائر کردہ اپیل سے متعلق ہے کی سماعت بھی کل کورٹ نمبر تین میں ہو گی،جسٹس اعجاز الاحسن دو رکنی بینچ سیریل نمبر 8سماعت کرے گا.تاہم متزکرہ کیس کی سماعت کے موقعہ پر مناسب حفاظتی اقدامات کی ضرورت ست آگاہ کر دیا گیا ہے.